حیدرآباد21اپریل(یواین آئی) تلنگانہ کی وزیر تعلیم سبیتا اندراریڈی نے ریاست میں پرائیویٹ ٹیچرس کے لئے فی کس 25لاکھ چاول کی فراہمی کا آغاز کیا۔راجندر نگر اسمبلی حلقہ کے عطاپور میں منعقدہ پروگرام میں ٹی آرایس کے رکن اسمبلی پرکاش گوڑ کے ساتھ ساتھ پرائیویٹ اسکولس کے اساتذہ نے شرکت کی۔حکومت کی جانب سے فراہم کئے جانے والے چاول پر پرائیویٹ ٹیچرس نے مسرت کا اظہار کیا اور وزیراعلی کے چندرشیکھرراو سے اظہار تشکر کیا۔اس موقع پر سبیتا اندرا ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ ریاست میں پرائیویٹ اساتذہ کو معاشی مدد اور ان کو چاول کی فراہمی کی اسکیم کی تلنگانہ میں شروعات کی گئی ہے جس کی مثال ملک کی کسی بھی ریاست میں نہیں ملتی۔انہوں نے کہا کہ کورونا کی وجہ سے پرائیویٹ اسکولس کے اساتذہ اور دیگر غیر تدریسی اسٹاف کو کافی مشکل صورتحال کا سامنا ہے۔

ان کی مشکلات کے پیش نظر وزیراعلی کے چندرشیکھرراو نے یہ فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ سال جب کورونا پھوٹ پڑا تھا تو اُس وقت وزیراعلی کے چندرشیکھرراو،نقل مکانی کرنے والے مزدوروں کے ساتھ کھڑے تھے۔وزیراعلی نے ان کو مالی مدد کی تھی اور ان کو راشن کا چاول بھی مفت فراہم کیاتھا۔انہوں نے کہا کہ پرائیویٹ ٹیچرس کو درپیش مسائل اور مشکلات کے پیش نظر اس مرحلہ میں ایک لاکھ 24ہزار اساتذہ کو 25کیلوچاول فراہم کیا جارہا ہے۔گذشتہ روز ایک ہی دن میں ایک لاکھ 12ہزار پرائیویٹ ٹیچرس کے بینک کھاتوں میں فی کس دو ہزار روپئے جمع کروائے گئے۔

انہوں نے امید ظاہر کی کہ ریاست کے عوام کے آشیرواد سے وزیراعلی کے چندرشیکھر راوجلد صحت یاب ہوں گے۔سبیتااندراریڈی نے پرائیویٹ ٹیچرس کی طرف سے وزیراعلی کا شکریہ ادا کیا۔تلنگانہ کے پرائیویٹ اسکولوں میں کام کرنے والے اساتذہ اور غیر تدریسی اسٹاف کو امداد کے لئے مجموعی طور پر1,18,004 افراد کو منتخب کیا گیا۔ ان میں سے1,06,383 اساتذہ اور 11,621 غیر تدریسی اسٹاف شامل ہے۔ حکام کا اندازہ ہے کہ یہ تعدادبڑھ سکتی ہے۔ منگل سے منتخب افراد کو دو ہزار روپے نقد رقم بینک کھاتوں میں جمع کروانے کا عمل شروع کیاگیا۔ واضح رہے کہ وزیراعلی کے چندرشیکھرراو نے کورونا کے تناظر میں مالی پریشانیوں کا سامنا کرنے والے پرائیویٹ اساتذہ اور پرائیویٹ غیر تدریسی اسٹاف کو ماہانہ 2 ہزار روپے نقد اور 25 کلو چاول دیئے کا اعلان کیا تھا۔ اس تناظر میں محکمہ تعلیم کے عہدیداروں نے آن لائن درخواستیں وصول کیں تھیں نے مستفید افراد کے انتخاب کا عمل مکمل کیا۔