تعمیراتی بزنس مین سنجے بیانی قتل معاملہ ‘مدھیہ پردیش کے اُجین سے مزید دو افراد گرفتار

ناندیڑ:11جون ( ورقِ تازہ نیوز) دہلی کے جیل میں بند مدھیہ پردیش کے اُجین کے ساکن دو افراد کو ناندیڑ پولیس نے دو دن قبل حراست میں لیا تھا۔ اُنہیں 11 جون کو باضابطہ قواعد کے مطابق گرفتار کرلیا گیا۔ ان دونوں ملزمین کو آج عدالت میں پیش کیا گیا۔ جج ایم آر سیوانی نے 15 جون تک انہیں پولیس تحویل میں روانہ کرنے کا حکم دیا۔ قبل ازیں 9ملزمین اور اب 2 ملزمین، اس طرح سنجے بیانی قتل معاملہ میں جملہ 11 ملزمین کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ناندیڑ کے شاردا نگر علاقہ میں معروف بزنس مین سنجے بیانی کو 5اپریل کو ان کے مکان کے روبرو گولیاں مار کر قتل کردیا گیا تھا۔ اس کے بعد پولیس نے خاطیوں نے تلاش شرع کردی تھی۔ تقریباً 55 دنوں کے بعد مذکورہ قتل کے ملزمین کو پولیس نے حراست میں لیا ہے۔ اب تک حراست میں لیے گئے ملزمین کی تعداد 11 ہوگئی ہے۔

خصوصی تحقیقاتی ٹیم کے چیف و ایڈیشنل پولیس سپرنٹنڈنٹ وجئے کباڑے کے علاوہ لوکل کرائم برانچ کے پولیس انسپکٹر دُوارکاداس چکھلی کر و تحقیقاتی ٹیم میں شامل دیگر افسران و ملازمین نے ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل آف پولیس نثار تامبولی اور پولیس سپرنٹنڈنٹ پرمود کمار شیوالے کی رہنمائی میں ملزمین کی تلاش شروع کی تھی۔ جرم میں استعمال کی گئی پلسر ٹووہیلر کو پولیس نے ضبط کیا ہے جسے ملزمین نے ثبوت مٹانے کے مقصد سے جلانے کی کوشش کی تھی۔ قبل ازیں پولیس نے 9 ملزمین کو گرفتار کیا جنہیں عدالت نے 13جون تک پولیس تحویل میں رکھنے کا حکم دیا ہے۔ اس معاملہ میں دہلی کی ایک جیل میں قید مدھیہ پردیش کے اجین کے ساکن راج پال سنگھ ایشور سنگھ چندراوت ( 29 سال) اور یوگیش کیلاس چند بھاٹی ، ان دونوں کو عدالتی کارروائی مکمل کرنے کے بعد ناندیڑ پولیس نے دو دن قبل حراست میں لیا تھا۔

جمعہ کی شب رات دیر گئے انہیں ناندیڑ لایا گیا۔ دیپک نام کے شخص کے کہنے پر سنجے بیانی کو قتل کئے جانے کی بات پولیس تفتیش کے دوران مذکورہ دونوں ملزمین کے ذریعے سامنے آئی ہے۔ قبل ازیں ناندیڑ آکر جانے کی بات بھی انہیں نے بتائی ہے۔ تحقیقاتی آفیسر پولیس انسپکٹر سنتوش تامبے، ڈپٹی انسپکٹر گنیش گوٹکے، سچن سونونے کی کڑی نگرانی میں مذکورہ دونوں ملزمین کو عدالت میں پیش کیا گیا۔ عدالت نے قتل کے سنگین معاملہ میں ملزمین کے پس منظر کو مدنظر رکھتے ہوئے انہیں 15 جون تک پولیس تحویل میں روانہ کرنے کا حکم دیا۔