تبدیلی مذہب کی کوشش“، 14افراد کے خلاف کیس درج

563

پونے: پمپری چنچواڈ پولیس نے ایک نابالغ لڑکے سمیت 14افراد کے خلاف لوگوں کو عیسائی بنانے کی کوشش میں مبینہ طور پر مالی مدد کے ذریعہ دو مذہبی فرقوں کے درمیان نفرت پیدا کرنے اور مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانے کا کیس درج کرلیا ہے۔
یہ کیس اتوار کی رات کھیڈ تعلقہ کے مرکل کے رہائشی پرساد سالونکے (25) کی شکایت کے بعد الند پولیس اسٹیشن میں درج کیا گیا۔ ملزمین کی شناخت پردیپ واگھمارے، پرشانت واگھمارے ساکنان چارہولی، رونق شنڈے، اشوک پنڈھارے، تیجس چاندنے، مکیش وشواکرشما، لکشمن نائیڈو، ایم وی، جے یون، ایشال سالوے، تین خواتین اور ایک 17 لڑکے کی حیثیت سے کی گئی۔

ایف آئی آر کے مطابق ملزمین اتوار کو شکایت کنندہ کے گاؤں گئے تھے اور لوگوں سے پوچھا کہ کیا انہوں نے بائبل پڑھی ہے۔ ملزمین نے مبینہ طور پر لوگوں کو کاروبار چلانے کے لیے رقم کی پیشکش کرکے چرچ آنے کی دعوت دی۔