اتر پردیش کے شاہجہاں پور میں ایک کاروباری نے اپنی بیوی اور بچوں کے ساتھ اجتماعی خودکشی کر لی۔ بتایا جاتا ہے کہ میاں بیوی نے پہلے مبینہ طور پر دونوں بچوں کا قتل کیا، اور پھر بعد میں خود پھانسی کے پھندے سے لٹک کر جان دے دی۔ 42 سالہ اکھلیش گپتا، 39 سالہ بیوی ریشو گپتا، بڑا بیٹا شیوانگ (12 سال) اور بیٹی ہرشیتا (9 سال) کی لاش پیر کے روز کاچے کاٹرا علاقے میں ان کے گھر کے کمرے میں لٹکتی ہوئی ملی۔

پولس سپرنٹنڈنٹ ایس آنند نے بتایا کہ معاملہ تب سامنے آیا جب کسی نے اکھلیش گپتا کے موبائل پر کال کی اور کال ریسیو نہیں ہونے پر وہ اس کے گھر پہنچ گیا۔ کوئی جواب نہیں آیا تو اس نے پولس کو اس کی اطلاع دی۔ ایس پی نے کہا کہ اپنے سوسائڈ نوٹ میں دوا کاروبار سے منسلک اکھلیش گپتا نے معاشی بحران کو واقعہ کے لیے ذمہ دار بتایا ہے۔ ایس پی نے کہا کہ ’’ایک کمرے سے اکھلیش گپتا اور ان کی بیوی کی لاش کو برآمد کیا گیا، جب کہ ان کے بچوں کی لاشیں دوسرے کمروں سے برآمد کی گئیں۔‘‘

ایس آنند کا کہنا ہے کہ معلوم پڑتا ہے پہلے شوہر- بیوی نے اپنے بچوں کا قتل کیا ہوگا، پھر خود کی جان لی ہوگی۔ سرکل افسر (سٹی) پروین کمار نے بتایا کہ مہلوک بریلی کے فرید پور علاقہ کا رہنے والا تھا اور گزشتہ 15 سال سے شہر میں کرایہ کے مکان میں رہ رہا تھا۔