• 425
    Shares

کابل: جمعرات کو کابل ائیرپورٹ پر بم دھماکوں میں 13 امریکی فوجیوں کی ہلاکت 2011 کے بعد افغانستان میں پنٹگان کے لیے ایک دن میں ہونے والا بدترین نقصان ہے۔فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق امریکی محکمہ دفاع کا کہنا ہے کہ ’داعش کی افغانستان شاخ کے دو خودکش حملہ آوروں نے ایئرپورٹ کے ایک اہم دروازے اور ایک قریبی ہوٹل میں دھماکے کیے جن میں 13 امریکی فوجی ہلاک ہو گئے۔‘افغانستان میں دو دہائیوں تک جاری رہنے والی جنگ میں اب تک 1909 امریکی فوجیوں کی ہلاکت ہو چکی ہے۔ اس جنگ میں امریکہ کا سب سے زیادہ نقصان 6 اگست 2011 کو ہوا تھا جب طالبان جنگجوؤں نے کابل کے جنوب مغربی صوبے وردک میں رات کے وقت شنوک ٹرانسپورٹ (ہیلی کاپٹر) پر فائرنگ کی تھی۔اس حادثہ میں 22 نیوی سیلز سپیشل آپریشنز کے فوجیوں سمیت30 امریکی امریکی اہلکار ہلاک ہو گئے تھے۔اے ایف پی کے مطابق اس حملے میں آٹھ افغانی اور امریکی فوج کا ایک کتا بھی مارا گیا تھا۔اس سے قبل 28 جون 2005 بھی ایک دن میں ہونے والے بڑے نقصان کے حوالے سے نمایاں تھا جب افغانستان کے مشرقی صوبے کنڑ کے پہاڑوں میں ایک ہیلی کاپٹر تباہ ہوا اور اس حملے میں تین نیوی سیل ہلاک ہوئے تھے۔دوسرے بڑے نقصانات میں جولائی 2008 میں صوبہ نورستان کے علاقے واناٹ میں سیکڑوں طالبان جنگجوؤں اور امریکی فوجیوں کے درمیان فائر فائٹ شامل ہے جس میں نو امریکی فوجی ہلاک ہوئے۔اس کے 15ماہ بعد اکتوبر 2009 میں 8امریکی سینکڑوں طالبان جنگجوؤں کے ساتھ اسی طرح کی لڑائی میں صوبہ نورستان میں بھی مارے گئے تھے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔ 


اپنی رائے یہاں لکھیں