• 425
    Shares

پرتاپ گڑھ:25ستمبر(یواین آئی) اترپردیش کے ضلع پرتاپ گڑھ میں بی جے پی اور کانگریس حامیوں کے درمیان جم کر مارپیٹ ہوئی۔ اس حادثے میں بی جے پی کے مقامی رکن پارلیمنت سنگم لال گپتا کو معمولی چوٹیں آئی ہیں۔اسمبلی حلقے رامپور خاص کے سانگی پور بلاک کے آڈیٹوریم میں ہفتہ کو آروگیہ میلا منعقد کیا گیا تھا۔ جس میں کانگریس کے سینئر لیڈر پرمود تیواری اور ان کی بیٹی و یوپی اسمبلی میں کانگریس لیڈر آرادھنا مشرا مونا موجود تھیں۔اس درمیان مہمان خصوصی کے طور پر پرتاپ گڑھ کے ایم پی سنگم لال گپتا پہنچے جس کےبعد ریلی مقام پر ہنگامہ شروع ہوگیا۔

پہلے کانگریس اور بی جے پی حامیوں کے درمیان جم کر نعرے بازی ہوئی جو دیکھتے ہی دیکھتے مارپیٹ میں تبدیل ہوگئی۔ اس درمیان رکن پارلیمنٹ سنگم لال گپتا اپنے سیکورٹی گارڈوں کے ساتھ آڈیٹوریم سے نکل کر بھاگ نکلے۔ مارپیٹ کے دوران ایم پی کے کپڑے پھٹ گئے اور ان کی گاڑی میں توڑ پھوڑ کی گئی۔واقعہ کے بعد سنگم لال گپتا نے اپنی پھٹی ہوئی شرٹ کو دکھاتے ہوئے کہا کہ منصوبہ بند طریقے سے ان پر حملہ کرایا گیا ہے۔ الزام ہے کہ کانگریس نے بی جے پی کارکنوں کو دوڑا دوڑا کر پیٹا اور بی جے پی ایم پی کی کئی گاڑیوں کو پتھراؤ اور لاٹھی۔ڈنڈوں سے نقصان پہنچا یا گیا۔

رکن پارلیمان کے مطابق سانگی پور بلاک میں وہ ایک سرکاری پروگرام میں شرکت کرنے گئے تھے جہاں اسٹیض پر منظم طریقے سے 50۔60لوگ موجود تھے۔ وہاں موجود ایک پولیس افسر نے اسٹیج سے لوگوں کو ہٹنے کے لئے کہا جس پر انہوں نے پولیس افسر کے ساتھ مارپیٹ شروع کردی۔ جب انہوں نے ایسا کرنےسے منع کیا تو بھیڑ ان پر ٹوٹ پڑی۔انہوں نے بھاگ کر کسی طرح اپنی جان بچائی۔

 

نائب وزیر اعلی کیسو پرساد موریہ نے ٹوئٹ کر حملے کی مذمت کی اور خاطیوں کے خلاف سخت کاروائی کرنے کی بات کہی۔ انہوں نے کہا’پرتاپ گڑھ کے سانگی پور بلاک میں منعقد غریب کلیان میلے مین بی جے پی رکن پارلیمان اور بی جے پی پسماندہ سماج مورچہ کے نیشنل جنرل سکریٹری سنگم لال گپتا جی پر حملہ کرے والے غنڈوں کے خلاف سخت کاروائی جلد از جلد کئے جانے کی ہدایت دی ہے۔ ایک بھی خاطی کو بخشا نہیں جائے گا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔