یروشلم: گزشتہ روز صہیونی اہل کاروں نے مسجد اقصیٰ میں کارروائی کرتے ہوئے نوجوانوں کو گرفتار کرلیا جبکہ مختلف علاقوں میں کریک ڈاؤن کے دوران کئی فلسطینیوں کو حراست میں لے کر تفتیشی مراکز پر منتقل کردیا گیا۔ مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق قابض فوج نے پرانے بیت المقدس شہر میں باب العامود کے مقام پر ایک فلسطینی نوجوان پر وحشیانہ تشدد کیا جبکہ مسجد اقصیٰ کے جنوب میں واقع سلوان قصبے سے تعلق رکھنے والے ایک بچے کو حراستی مرکز میں پیش کا نوٹس جاری کیا گیا۔ واضح رہے کہ بیت المقدس کے فلسطینی باشندوں کی گرفتاریوں کا سلسلہ معمول بن چکا ہے۔ اسرائیلی فوج آئے روز مسجد اقصیٰ میں نماز کے لیے آنے والے فلسطینیوں پر تشدد کرتی اور انہیں قبلہ اول سے دْور کرنے کی کوششیں کررہی ہے۔ دریں اثنا فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر نابلس میں خالی گئی حومش نامی یہودی کالونی کے قریب شرپسند آباد کاروں کے ایک گروپ نے فلسطینیوں پرحملہ کر دیا۔ اس موقع پر فلسطینی شہریوں نے یہودی آباد کاروں پر جوابی سنگباری کی۔


اپنی رائے یہاں لکھیں