بھارت کو اقلیتوں کے تئیں سری لنکا کی غلط پالیسیوں کے نتائج سے سبق سیکھنے کی ضرورت ہے، رگھورام راجن

352

نئی دہلی: ریزرو بینک آف انڈیا کے سابق سربراہ رگھورام راجن نے منگل کو کہا کہ ہندوستان 10 سال پہلے کی نسبت جمہوریت کے طور پر کم لبرل ہے۔ این ڈی ٹی وی کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں، پڑوسی ملک سری لنکا میں اقتصادی بحران پر گفتگو کرتے ہوئے، راجن نے کہا کہ سری لنکا کے بحران کی ایک وجہ اقلیتوں کے تئیں اس کی پالیسیاں ہیں۔

ایک وقت تھا جب سری لنکا کو ایک کامیاب درمیانی آمدنی والی معیشت کے طور پر دیکھا جاتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا میں اقلیتوں کا ایک بڑا حصہ تامل آبادی پر مشتمل ہے۔ ان کے قریب بے روزگاری کی ترقی کا مسئلہ ہے۔

لیکن سیاست دانوں نے اقلیتوں کے مسئلے سے توجہ ہٹانا بہتر سمجھا اور ان کے درمیان ایک ایسی کھائی پیدا کر دی جس نے ملک کو خانہ جنگی کی طرف لے گیا۔

آر بی آئی کے سابق سربراہ نے کہا کہ میں کہوں گا کہ ہمیں سری لنکا سے سبق لیتے ہوئے فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور ملک کے اتحاد کے لیے کام کرنے کی ضرورت ہے۔ جس سے ملکی معیشت اور سالمیت مضبوط ہو گی۔ بھارت کو سوچنا چاہیے کہ ان چیزوں کو ہوا دینے میں کچھ سیاستدان کیسے ملوث ہیں۔