بھارت میں طلبا کے خودکشی کے واقعات میں اضافہ

166

بھارت میں گزشتہ برس بھی بڑی تعداد میں طلبہ نے خودکشی کرلی۔ بھارت میں جرائم کے اعداد و شمار سے متعلق قومی ادارے (این سی آر بی) کی رپورٹ کے مطابق پچھلے پانچ برسوں کے مقابلے گزشتہ برس یعنی سن 2021 میں طلبہ کی خودکشی کی تعداد سب سے زیادہ تھی۔

این سی آر بی کی سن 2021 کی رپورٹ کے مطابق سن 2020 کے مقابلے میں سن 2021 میں طلبہ کی خودکشی کی تعداد میں 4.5 فیصد کا اضافہ ہوا۔
گزشتہ پانچ برسوں میں مسلسل اضافہ
این سی آر بی کی رپورٹ کے مطابق سن 2016 سے سن 2021 کے درمیان طلبہ کی خودکشی کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہوا ہے۔

سن 2016 کے مقابلے میں سن 2021 میں یہ اضافہ تقریباً 27 فیصد ہے۔این سی آر بی کی رپورٹ کے مطابق سن 2016 میں 9478 طلبہ نے خودکشی کی، سن 2019 میں یہ بڑھ کر 10335 ہو گئی جب کہ سن 2021 میں 13089 طلبہ کی خودکشی کی رپورٹ درج کرائی گئی۔

بھارتی طلبہ میں خودکشی کا بڑھتا رجحان
پچھلے پانچ برسوں کے دوران خودکشی کے مجموعی واقعات میں بھی 20 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ سن 2016 میں خودکشی کی مجموعی تعداد 131008 تھی جو سن 2021 میں بڑھ کر 164033 ہو گئی۔