بھارت جوڑو یاترا کے پیش نظرناندیڑشہرو ضلع میں 7تا 11نومبرتک ٹرافک نظام میں تبدیلی

887

ناندیڑ:3نومبر ( ورقِ تازہ نیوز) کانگریس قائد راہول گاندھی کی بھارت جوڑو یاترا ناندیڑضلع میں 7تا11 نومبر تک قیام پذیررہے گی۔اس دوران انکے مختلف پروگرام رکھے گئے ہیںوہ ضلع میں پیدل دورہ کررہے ہیں۔ اس کے پیش راہول گاندھی کی یاترا جن جن علاقوں میںگزرنے والی ہے وہاں پر ٹرافک کے نظام میںتبدیلی کی گئی ہے ۔ جس کی تفصیلات محکمہ پولس نے آ ج جاری کی ہے ۔

7 سے 11 نومبر 2022 کے دوران ضلع میں ٹرانسپورٹ روٹ میں تبدیلی آئی ہے۔ مہاراشٹر پولیس ایکٹ 1951 کی دفعہ 36 کے تحت سپرنٹنڈنٹ آف پولیس شری کرشنا کوکاٹے نے ٹریفک قوانین میں یہ تبدیلی کی ہے اور اس سلسلے میں نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔ ایمبولینس اور ضروری خدمات کی گاڑیوں کے ساتھ ساتھ سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کے ذریعہ اختیار کردہ گاڑیوں کو اس نوٹیفکیشن سے مستثنیٰ کردیا گیا ہے۔

پیر 7 نومبر 2022 کو دوپہر 2 بجے سے رات 11 بجے تک نرسی چوک سے دیگلور نیشنل ہائی وے نمبر۔ 161 ہر قسم کی ٹریفک کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔ اس کے بجائے نرسی-گڈگا-کھراب کھنڈگاو¿ں-بھائیگاو¿ں روٹ کو ٹریفک کے متبادل راستے کے طور پر دیگلور جانے اور جانے والی ٹریفک کے لیے استعمال کیا جاتا رہے گا۔ بھاری گاڑیوں اور دیگر گاڑیوں کے لیے، نرسی-گڈگا-مکھیڈ-برہالی-مکرم آباد-کردکھیڑ-دیگلور جانے اورآنے والی ٹریفک جاری رہے گی۔ نرسی – کسرالی – رودر پور – متانال – تھڈیساولی – کھت گاو¿ں – کوٹیکلور – شاہ پور – سندرگی – ہنومان ہپپرگا – دیگلور۔ اس کے علاوہ دیگلور سے اسی راستے سے ٹریفک کی آمد و رفت جاری رہے گی۔

منگل 8 نومبر کو شام 4 بجے سے رات 11 بجے تک نرسی چوک تا دیگلور نیشنل ہائی وے نمبر۔ 161 ہر قسم کی ٹریفک کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔ اس متبادل راستے کے بجائے نرسی- گڈگا- کھرب کھنڈگاو¿ں- بھائے گاوں کا راستہ دیگلور تک جاری رہے گا۔ بھاری گاڑیوں اور دیگر گاڑیوں کے لیے، نرسی-گڈگا-مکھیڈ-برہالی-مکرم آباد-کردکھیڈ-دیگلور جانے اور آنے والی ٹریفک جاری رہے گی۔ نرسی – کسرالی – رودر پور – متنیال – تھلی ساولی – کھت گاو¿ں – کوٹیکلور – شاہ پور – سندرگی – ہنومان ہپرگا – دیگلورآنے اورجانے کیلئے سڑک کھلی رہے گی۔

بدھ 9 نومبر کو شام 4 بجے سے رات 11 بجے تک دھنے گاو¿ں پھاٹا سے نرسی-دیگلور قومی شاہراہ نمبر۔ 161 ہر قسم کی ٹریفک کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔ اس کے بجائے بھاری گاڑیوں اور دیگر گاڑیوں کے لیے متبادل راستہ ناندیڑ-مدکھیڈ-عمری-دھرم آباد-کنڈل واڑی-بلولی-تلنگانہ کے لیے کھلا رہے گا۔ ناندیڑ -مدکھیڑ – عمری – کارےگاو¿ں پھاٹا – کاسرا لی – رودر پور -متنیال- تھلیساولی – کھت گاو¿ں – کوٹیکلور – شاہ پور – سندرگی – ہنومان ہپرگا – دیگلور آنے اور جانے کیلئے کھلا رہےگا۔ بھاری گاڑیوں سمیت دیگر گاڑیوں کے لیے، لاتور/ کرناٹک سے ناندیڑ- قندھار- جام- جالکوٹ- ادگیر کے راستے ٹریفک جاری رہے گی۔ ناندیڑ-قندھار-مکھیڈ-ہیبت مارگ-خاناپور-دیگلور راستہ بھاری گاڑیوں اور دیگر گاڑیوں کے لیے جاری رہے گا۔

10 نومبر بروز جمعرات شام 4 بجے سے رات 11 بجے تک ناگپور-ہنگولی سے آنے والی ٹریفک ہر قسم کی ٹریفک کے لیے مکمل طور پر بند رہے گی۔ نرسی سے ناندیڑ تک سفر کے تمام طریقے مکمل طور پر بند رہیں گے۔ چنداسنگھ کارنر سے ڈھولے کارنر رتک راستہ ٹریفک کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔ چنداسنگھ کارنر – واجے گاو ں – دیگلور ناکہ – بافنا – ریلوے اسٹیشن کاراستہ نقل و حرکت کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔ مہارانا پرتاپ چوک سے بافنا ٹی پوائنٹ تک آنا اور جانا اور مہارانا پرتاپ چوک سے ہنگولی گیٹ اور چکھل واڑی تک آنا جانا مکمل طور پر بند رہے گا۔ ریلوے اسٹیشن- شیواجی مہاراج مجسمہ سے گاندھی مجسمہ اور وزیرآباد چوک تک آنے والا راستہ ٹریفک کے لیے بند رہے گا۔ یہ مہاویر چوک سے شیواجی مہاراج مجسمہ تک نقل و حرکت کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔ مہاویر چوک سے وزیرآباد تک آمدورفت کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔ قدیم کوٹھا-رام سیتو پل-ترنگا چوک-وزیرآباد چوک کی طرف آنے والی ٹریفک وزیرآباد چوک سے آئی ٹی آئی چوک تک مکمل طور پر بند رہے گی۔ آئی ٹی آئی چوک سے انا بھاو  ساٹھے مجسمہ تک مکمل طور پر بند رہے گا۔

آئی ٹی آئی چوک سے راج کارنر-آسنا برج تک واپسی مکمل طور پر بند رہے گی۔ آسنا برج کو شنکراو¿ چوان چوک سے آنے اور جانے کے لیے مکمل طور پر بند کر دیا جائے گا۔ بھوکر پھاٹا سے ناندیڑ آنے والی ٹریفک آسنا پل تک بند رہے گی۔ اس متبادل راستے کے بجائے ناگپور-ہنگولی ٹریفک اونڈھا-پربھنی-پالم-لوہا-لاتور کے راستے آتی اور جاتی رہے گی۔ ناگپور- ہنگولی- بھوکر پھاٹا- بھوکر- عمری- دھرم آباد- کنڈل واڑی- بلولی- دیگلور, ناگپور- ہنگولی جانے اور بھوکر پھاٹا- مدکھیڑ- عمری- کریگاو¿ں پھاٹا- بلولی- تلنگانہ جانے اور آنے والی ٹریفک کیلئے کھلا رہے گا۔ بھاری گاڑیوں اور دیگر گاڑیوں کے لیے، نارسی-گڈگا-کوٹھا-کلمبر-عثمان نگر-ناندیڑ جانے اورآنے والی ٹریفک جاری رہے گی۔ بھاری گاڑیوں اور دیگر گاڑیوں کے لیے، نرسی-کاسرالی-کریگاو¿ں پھاٹا-عمری-مدکھیڈ-ناندیڑ جانے اورآنے والی ٹریفک جاری رہے گی۔

تپاپاٹی سے گوپال چاوڑی-ڈھولے کارنر-دودھ ڈیری-سائی کمان/نوگھاٹ پل سے پرانے مونڈھا تک ٹریفک جاری رہے گی۔تپا پاٹی سے گوپال چاوڑی-ڈھولے کارنر- سمبھاجی چوک- لاتورپھاٹا- لاتور- لوہا اور قدیم مونڈھا کی طرف ٹریفک جاری رہے گی۔ وزیرآباد چوک سے راج کارنر تک ترنگا چوک – لال واڑی انڈر برج – مہاویر سوسائٹی – گنیش نگر وائی پوائنٹ – پاوڑے واڑی ناکہ مور چوک – چھترپتی چوک سے راج کارنر تک ٹریفک جاری رہے گی۔
11 نومبر بروز جمعہ شام 4 بجے سے رات 11 بجے تک ناگپور-ہنگولی سے آنے والی ٹریفک ہر قسم کی ٹریفک کے لیے مکمل طور پر بند رہے گی۔ آسنا پل سے بھوکر پھاٹابسمت پھاٹہ سے اردھا پور اور ضلعی سرحد تک ہر قسم کی ٹریفک مکمل طور پر بند رہے گی۔ یلگاو¿ں پھاٹا سے بھوکر پھاٹا تک تمام ٹریفک کے لیے مکمل طور پر بند رہے گا۔