بزرگ کی آخری رسوم میں شرکت کیلئے سینکڑوں لوگ شمشان پہنچے تھے،بعد میں کورونا رپورٹ پازیٹو آنے پر ہنگامہ

بھوپال:مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں گزشتہ دنوں جگن ناتھ میتھل کی موت ہوگئی تھی۔ ان کی آخری رسوم میں بڑی تعداد میں لوگ شامل ہوئے تھے۔ تین دن بعد جب مہلوک بزرگ کی جانچ رپورٹ کورونا وائرس پازیٹو  آئی تو رسوم میں شامل لوگوں کے درمیان ہنگامہ مچ گیا۔ ساتھ ہی بزرگ کا علاج کرنے والے حمیدیا اسپتال کے ڈاکٹروں اور اسٹاف کے درمیان بھی سنسنی پھیل گئی ہے۔ کیونکہ 3 دن پہلے جب بزرگ کی موت ہوئی تھی تب اس وقت نہ ہی کنبے کو اور نہ ہی حمیدیا اسپتال کے ڈاکٹروں کو یہ معلوم تھا کہ انہیں بزرگ شخص کورونا وائرس متاثر  ہے۔

بھوپال میں کورونا وائرس کا انفیکشن تیزی سے پھیلتا جارہا ہے۔ بھوپال میں کووڈ۔19 سے یہ دوسری موت ہوگئی ہے۔ سنیچر کی دیر رات بھوپال کے جہاں گیر آباد مقامی مہلوک بزرگ جگن ناتھ میتھ کی کوروناجانچ رپورٹ پازیٹو آئی۔ ان کی موت  3 دن پہلے بھوپال کے حمیدیا اسپتال میں علاج کے دوران ہوئی تھی۔ راجدھانی میں اب کورونا سے موت کی تعداد 2  پہنچ گئی ہے۔ 6 اپریل کو بھوپال میں کورونا سے پہلی موت ہوئی تھی۔ کوروناوائرس سے متاثر ابراہیم گنج مقامی نریش کھٹیک نے بھوپال کے نمردا اسپتال میں کوروناوائرس سے دم توڑ دیا تھا۔

سبھاش وشرام گھاٹ پر پہنچے تھے سکیڑوں لوگ

جگن ناتھ میتھل کی 9 اپریل کو موت ہوئی ہے۔ ان کی آخری رسوم میں برکھیڑی جہاں گیرآباد کے لوگ بڑی تعداد میں شامل ہوئے تھے۔ اس وقت سبھی لوگ سوچ رہے تھے کہ دادا بزرگ تھے۔ اس وجہ سے ان کی موت ہوگئی۔ ان کی آخری رسوم میں جہانگیر آباد میں واقع ان کے گھر سے لیکر سبھاش نگر وشرام گھاٹ تک سیکرڑوں لوگ پہنچے تھے۔ ساتھ ہی بزرگ کا علاج کرنے والے حمیدیا اسپتال کے ڈاکٹروں اور اسٹاف کے درمیان بھی یہ جانکاری نہیں تھی۔ ایسے میں اب 3 دن بعد بزرگ شخص کورونا وائرس رپورٹ پازیٹو   آئی ہے تو لوگوں کے ساتھ استال کے ڈاکٹر اور اسٹاف میں ہبگامہ مچ گیا ہے۔