ناندیڑ.کرنال: :5مئی (ورق تازہ نیوز) ناندیڑ میں بھیجے جانے والے دھماکہ خیز مواد اور کئی ہتھیاروں کو ہریانہ میں کرنال پولس نے ضبط کر لیا ہے اور ناندیڑ میں تباہی کو روک دیا گیا ہے۔ہریانہ پولیس نے خالصتانی ملی ٹنسی اور آئی ایس آئی سے وابستہ پنجاب میں رہنے والے چار مشتبہ ملی ٹینٹوں کو اسلحہ اور آر ڈی ایکس کے ساتھ گرفتار کیا ہے۔

معلومات کے مطابق ان چاروں کو کرنال کے بستارا ٹول سے صبح 4 بجے گرفتار کیا گیا۔یہ لوگ دہلی کے راستے ناندیڑ پہنچنے والے تھے

رپورٹ کے مطابق چاروں ایک انووا کار پر سوار ہو کر دہلی کی طرف جا رہے تھے۔ گرفتار مشتبہ ملی ٹینٹوں کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ پنجاب کے رہائشی ہیں اور ان کے نام گرپریت، بھوپیندر امندیپ اور پرویندر سنگھ ہیں۔ اطلاعات کے مطابق چاروں پاکستان کے رہنے والے ہرویندر سنگھ کے ساتھی ہیں۔ کرنال پولس معاملے کی جانچ کر رہی ہے۔

گرفتار مشتبہ ملی ٹینٹوں کے بارے میں کرنال کے ایس پی نے کہا کہ ہرویندر سنگھ رنڈا نے انہیں حکم دیا تھا۔ بتایا جا رہا ہے کہ ان چار مشتبہ ملی ٹینٹوں کو تلنگانہ آئی ای ڈی بھیجنا تھا۔ ان کو لوکیشن پاکستان سے بھیجی گئی۔ اس سے قبل یہ لوگ دو مقامات پر آئی ای ڈی سپلائی کر چکے ہیں۔ ان کے خلاف مدھوبن پولس اسٹیشن میں ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ اے سی پی اندری معاملے کی جانچ کریں گے۔

مشتبہ ملی ٹینٹوں کے قبضے سے دیسی ساختہ پستول، 31 کارتوس اور 3 لوہے کے کنٹینر برآمد ہوئے ہیں۔ اس کے ساتھ ایک لاکھ 30 ہزار روپے کی نقدی بھی برآمد کی گئی ہے۔ چاروں گرفتار شدگان میں سے 3 نوجوان فیروز پور کے رہائشی ہیں، جبکہ ایک لدھیانہ کا رہنے والا ہے۔کرنال کا رہنے والا ہرویندر سنگھ عرف رندا سندھو اب ببر خالصہ کا رکن ہے۔

کرنال پولیس کے مطابق، وہ فی الحال پاکستان میں ہے اور اس نے ڈرون کے ذریعے مواد کو فیروز پور بھیجا اور پھر چاروں دہشت گرد اس مواد کو لے کر ناندیڑ پہنچنے والے تھے اور کرنال پولیس کے مطابق، یہاں کچھ گڑبڑ پیدا کر نے کی تیاری میں تھے۔ناندیڑ پولیس اور ناندیڑ ضلع کے لوگوں کو اب پوری طرح چوکنا رہنے کی ضرورت ہے۔

ناندیڑ ضلع میں، پولیس مجرموں کے خلاف کارروائی کے لیے گزشتہ ایک ماہ سے ہائی الرٹ ہے۔ آج ناندیڑ کی لوکل کرائم برانچ نے ایک مجرم کو گولی مار کر زخمی کرنے کے بعد گرفتار کیا۔