بریکینگ نیوز:کیا مہاراشٹرمیں اسکول وقت پر شروع ہوںگے؟وزیرتعلیم ورشاگائیکواڑ کااہم بیان

ممبئی: 5 جون۔ (ورق تازہ نیوز)گزشتہ چند مہینوں میں ریاست کے لوگوں کو اس وقت کافی راحت ملی جب کورونا کی تیسری لہر کے تھمنے کے بعد تمام پابندیاں ہٹا دی گئیں۔ تاہم رواں ماہ کے آغاز سے ہی مریضوں کی تعداد میں اچانک اضافے سے حکومت الرٹ ہوگئی ہے۔وزیر اعلیٰ اور وزیر صحت نے بھیڑ والی جگہوں پر ماسک پہننے کی اپیل کی ہے حالانکہ ماسک کی سختی کی بات نہیں کی ہے۔

تو کیا اب کورونا کی مزید پابندیاں عائدہوں گی؟ نیز کیا گرمیوں کی تعطیلات کے بعد اسکول وقت پر دوبارہ شروع ہوگا؟ تو کیا نئے تعلیمی سال میں اسکول وقت پر شروع ہوگا اور سال بھر میںنصاب مکمل ہوگا؟ ا س طرح کے سوالات اب والدین کے ذہنوں میں چل رہے ہیں۔ اس دوران وزیر تعلیم ورشا گائیکواڑ نے بڑھتے ہوئے کورونا کے پس منظر میں اسکولوں کے بارے میں بڑا بیان دیا ہے۔
وزیر تعلیم ورشا گائیکواڑ نے کہا ہے کہ وہ اسکولوں کے لیے ایس او پی تیار کریں گے۔ا سکول کا بھی خیال رکھناکیا جائے گا۔

طلبہ کو کوئی نقصان نہیں پہنچایا جائے گا۔ ہم ریاست میں کورونا کے مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کے پس منظر میں محکمہ صحت سے مشورہ کرنے جا رہے ہیں۔” ہم نے پہلے بھی اسکولوں کے لیے ایس او پیز بنائے تھے اور اس بار بھی اقدامات کیے جائیں گے۔ تاہم اسکول شروع کرنے کا فیصلہ بات چیت کے بعد ہی کیا جائے گا۔ لہٰذا ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ا سکول کو احتیاط سے شروع کریں تاکہ طلباء کو مزید نقصان نہ پہنچے۔ ریاست میں پچھلے کچھ دنوں سے مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے اور پچھلے دو تین دنوں میں یہ تعداد ایک ہزار سے زیادہ ہو گئی ہے۔ کل ریاست میں 1300 سے زیادہ کورونا مریض پائے گئے۔ اس سے ایک بار پھر بے چینی کا ماحول پیدا ہو گیا ہے۔