نئی دہلی: وزارت دفاع نے پاکستان میں میزائل گرنے پر اپنا سرکاری ردعمل دیا ہے۔ اس کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ ’یہ حادثہ تکنیکی خرابی کے باعث پیش آیا ہے اور اس واقعے پر گہرا افسوس ہوا ہے۔‘ وزارت دفاع کی جانب سے کہا گیا کہ 9 مارچ 2022 کو معمول کی مرمت کے کام کے دوران تکنیکی خرابی کے باعث یہ میزائل حادثاتی طور پر داغا گیا تھا۔

حکومت نے معاملے کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے اعلیٰ سطحی انکوائری کا حکم دے دیا ہے۔وزارت دفاع نے کہا کہ یہ سمجھا جاتا ہے کہ میزائل پاکستان کی حدود میں گرا ہے۔حالانکہ یہ انتہائی افسوسناک ہے، لیکن یہ ایک راحت کی بات ہے کہ کوئی حملہ نہیں ہوا۔ اس میںکوئی ملوث ہے، کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا ہے۔ پاکستان نے اس معاملے میں ہندوستان کے قونصل خانے کے انچارج کو طلب کیا تھا اور ‘فلائنگ انڈین سپرسونک آبجیکٹ کی طرف سے فضائی حدود کی بلا اشتعال خلاف ورزی پر شدید احتجاج درج کرایا تھا۔ اور شفاف انکوائری کا مطالبہ کیا۔