• 425
    Shares

اورنگ آباد :31مئی۔ (ورق تازہ نیوز)اورنگ آباد سنٹرل اسمبلی حلقہ کے شیوسینا کے ایم ایل اے پردیپ جیسوال کو سرکاری کام میں رکاوٹ ڈالنے پر 6 ماہ قید اور 5 ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی گئی ہے۔ 2019 میں ، وہ رات کے وقت اورنگ آباد کرانتی چوک پولیس اسٹیشن گئے تھے اور تھانہ پولیس افسر کے سامنے شیشے توڑ کر ایک کرسی پھینک دی تھی۔اس معاملے میں انہیں تین دن کے لئے عدالتی تحویل میں بھی دیاگیاتھا ۔

11 اور 12 مئی  کو اورنگ آباد میں ہونے والے فساد کے سلسلے میں کرانتی چوک پولیس نے گاندھی نگر سے دو نوجوانوں کو گرفتار کیا تھا۔ جیسے ہی جیسوال کو اس کے بارے میں اطلاع ملی اتوار کی رات گیارہ بجے کے لگ بھگ وہ کرانتی چوک پولس تھانے گئے۔ اس وقت ، پولیس ہیڈ کانسٹیبل چندرکانت پوٹے بطور تھانہ افسر کی کرسی پر بیٹھے تھے۔

اس وقت انھوںنے کہا تھا کہ گاندھی نگر کے گرفتار ملزمین کو اسی وقت ضمانت پر رہا کریں۔ ان ملزمان کو اسسٹنٹ انسپکٹر پولیس شیخ اکمل نے گرفتار کیاتھا۔ ا س وقت شیخ اکمل نے انھیں سمجھانے کی کوشش کی تھی لیکن وہ نہیں مانے اور من مانی کرنے لگے تھے ۔اور اعلی پولس افسران کو گالی گلوچ کرکے دھمکی دی کہ کل دیکھو شہر میں کیا واقعات رونما ہوتے ہیں۔ا س معاملے میں تھانہ آفیسر کی شکایت پر جیسوال کے خلاف سرکاری کام میں رخنہ اندازی ودھمکی دینے کامقدمہ در ج کیاگیاتھا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔