• 425
    Shares

ممبئی:20 جولائی۔( ورق تازہ نیوز)MAH TET امتحان جو پچھلے دو سالوں سے تعطل کا شکار ہے ، اس کا انعقاد 15 ستمبر سے 31 دسمبر تک ہوگا۔ اگرکوئی امیدوار ایک باریہ امتحان کامیاب ہوجاتا ہے تو وہ زندگی بھر ٹیچر کی ملازمت کیلئے اہل رہے گا۔

جو امیدواروں کے اساتذہ بننے کے لئے ایک بہت بڑی راحت ہے۔ریاست میں 40000 سے زیادہ آسامیاں خالی ہیں اور ریاستی حکومت نے خالی آسامیاں مراحل میں پر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پہلے مرحلے میں 6100 نشستیں پر ہوں گی۔

 

ریاست میں ضلع پریشد پرائمری اسکولوں میں 27000 اور سیکنڈری اسکولوں میں 40000 آسامیاں خالی ہیں۔ کورونا بحران کی وجہ سے ٹی ای ٹی کا امتحان گذشتہ دو سالوں سے نہیں ہوا تھا۔ آخری امتحان 2018-19 میں ہوا تھا۔ امکان ہے کہ اس سال امیدواروں کی تعداد میں اضافہ ہوگا۔ ہر سال 7 لاکھ امیدوار امتحان میں بیٹھتے ہیں۔ اس سال اس میں تین لاکھ تک اضافے کی توقع ہے۔

وزیر تعلیم ورشا گائیکواڈ نے 8 جولائی کو اعلان کیا تھا کہ ریاست میں 6100 آسامیاں بھرنے کا راستہ کھلا ہے۔ چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے ، نائب وزیراعلیٰ اجیت پوار اور بالاصاحب تھورات نے کورونا بحران کی وجہ سے تعطل کاشکار اس بھرتی کواب بھرتی کے عمل سے مستثنیٰ کرنے کی تجویز کو منظوری دے دی تھی۔ اسی مناسبت سے ٹی ای ٹی امتحان دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔