پاتھری (پربھنی)18نومبر۔(ورق تازہ نیوز): ایک پریشان کن واقعہ آج دوپہر 2 بجے کے قریب پیش آیا جب این سی پی قانون ساز کونسل کے رکن باباجانی درانی کو جنازے کے جلوس کے دوران مارا پیٹا گیا اور جان سے مارنے کی دھمکی دی گئی۔ ایک شخص کے خلاف درانی کی شکایت پر پاتھری پولس اسٹیشن میں مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

ایم ایل سی باباجانی درانی آج جلوس جنازے میں موجود تھے۔اس وقت محمد بن کلیب بھی اس مقام پر آئے تھے۔ اس وقت درانی‘ دتا راو¿ مائدلے اور بختیار خان اور زبیر بن ہاویل سے بات کر رہے تھے۔ اتفاق سے محمد بن کلیب اور درانی آمنے سامنے آگئے۔ اچانک محمد بن کلیب نے درانی پر حملہ کر دیا۔ انکی پٹائی کردی ۔شہریوں نے مداخلت کرتے ہوئے اسے پکڑ کر لیا۔ محمدبن نے درانی کو دھمکی دی کہ ” اگر میرے پاس پستول ہوتی تو مجھے گولی مار دےتا۔“

اس دوران، باباجانی درانی نے پاتھری پولیس اسٹیشن میں محمد بن کلیب کے خلاف شکایت درج کرائی ہے۔ پولس نے مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اورمزید تفتیش جاری ہے۔ تھانے کے باہر باباجانی درانی کے حامیوں کا ہجوم ہوگیا تھا۔ جبکہ پاتھری شہر میںبھی ملزم کے خلاف مظاہرے کئے گئے جس سے شہر میں کچھ دیر کے لیے کشیدگی پیدا ہوگئی تھی۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔