• 425
    Shares

باصلاحیت افراد ملک و ملت کے ترقی کے لیے سامنے آئیں
مرز ایوسف بیگ ناظم ضلع جما عت اسلامی ہند ناندیڑ کا اردھاپور میں کنونشن سے خطاب

اردھاپور (شیخ زبیر ) مرزا یوسف بیگ صاحب ناظم ضلع جماعت اسلامی ہند ناندیڑ نے اردھاپور شہر میں جماعت اسلامی ہند اردھاپور کی جانب سے منعقدہ کنونش میں خطاب کرتے ہوئے کہا کے اسلام اجتماعیت کی تعلیم دیتا ہے اس لیے ہر شخص کو چاہیے کہ وہ اجتماعیت سے جڑا رہے اسے جو اجتماعیت پسند آتی اس سے منسلک ہوکر دین کا کام کرے ،اکیلے اور انفرادی زندگی گذارنے کا اسلام میں تصور نہیں ہے ۔ بندگی کا مطلب صرف عبادت نہیں ہے بلکہ اپنے رب کے ہر حکم پر سر اطاعت خم کرنا اور ان احکام کو پورا کرنا جس کا اس کے رب نے حکم دیا ہے یہ مکمل بندگی ہے ،رب کے احکامات کو عملی زندگی میں جھٹلانا اور صرف نماز روزہ ادا کرنا تابعداری نہیں ہے ۔اللہ تعالی اپنے بندوں سے صرف سجدے نہیں چاہتا بلکہ ایک مومن سے یہ مطلوب ہے کہ عملی زندگی میں اپنے رب کے احکامات کی اطاعت کا جائے ۔آدمی اگر دنیا میں بہت سے نیکیاں کمائے لیکن اللہ کے احکامات کی پیروری نہ کرے تب وہ جنت میں نہیں جاسکتا ۔مثلاً کسی نے دنیا میں بہت نیکی کے کام کیے لیکن اپنے ماں باپ کی نافرمانی کی یا سود خوری کی تو اسلامی تعلیمات یہ ہے کہ ایسا شخص جنت کی خوشبو بھی نہیں پائے گا ۔
جامعةالصالحات اردھاپور میں منعقدہ اس کنونشن میں جو کارکن سازی مہم کے دوران نئے بننے والے کارکنان کے لیے رکھا گیا تھا،راحت اربن کریڈٹ کو آپریٹیو سوسائٹی اردھاپور کے قیام کا تفہیمی پروگرام بھی شامل کیا گیا ۔اس کنونشن میں جماعت اسلامی ہند اردھاپور کے تمام وابستگان ارکان ،کارکنان،حلقہ خواتین ،جی آئی او ایس آئی او ،یوتھ ونگ ،ایم پی جے ،اور مجلس علماءکے ممبران موجود تھے ۔پروگرام کا آغاز درس قران سے ہوا جو محترم سلیمان خان صاحب نے اجتماعیت کی اہمیت پر دیا ۔امیر مقامی جناب عبداللہ خان صاحب نے اپنے خطاب میں کہا کہ جماعت اسلامی آپ سے کوئی صلا اور اجر نہیں چاہتی ہے اسکا کام بے لوث اور اقامت دین کے ذریعہ رضائے الہی کا حصول ہے ،جماعت کے بہت سے شعبے ہے ،اساتذہ ،نوجوان ،طلباء،خواتین ،علمائ،ہر ایک کے لیے یہاں پلیٹ فارم موجود ہے ۔آپ رضائے الہی کی خاطر جو کام کرنا چاہتے ہیں اس کے لیے ہمارے پاس کام ہے ،سماجی کام، سوشل جسٹس اور انصاف کے لیے کام ، خدمت خلق کے لیے کام ،معاشی مسائل پر کام ،دعوت دین کا کام ،اصلاح معاشرہ کا کام ،طلبا کے مسائل پر کام ،غرض ہر شعبہ میں ہمارے پاس کام کے مواقع ہیں ضرورت اس بات کی ہے کہ نوجوان اور باصلاحیت افراد کو اس مشن اور کام کے ساتھ جڑنا چاہیے تاکہ ملک ،ملت اور دین کے لیے ان کی صلاحیتیں ان کا وقت اور ان کا ہنر کام آئے ۔
حلقہ خواتین کی ناظمہ عرفی صدیقہ نے تحریک اسلامی میں کارکنوں کے باہمی تعلقات کے عنوان پر تقریر کرتے ہوئے اقامت دین کی جد جہد میں خواتین کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے امت مسلمہ میں آپسی تعلقات کا اللہ اور اس کے رسول نے کیا حکم دیا ہے اور تحریک کے کرکان کے آپسی تعلقات کیسے ہونے چاہیے اس پر تفصیلی روشنی ڈالی اپنی تقریر میں انہوں احساس ذمہ داری پر بھی گفتگو کی ۔شعبہ اسلامی معاشرہ کے انچارج جناب افروز خان صاحب نے جماعت اسلامی کا تاریخی پس منظر پیش کیا اور اس کے قیام سے لے کر آج تک کے سفر پر روشنی ڈالی ۔
سودی نظام اور سود کی لعنت پر اظہار خیال کرتے ہوئے مفوضہ راحت اربن کریڈٹ کو آپریٹیو ساسائٹی کے ڈائریکٹر پرویز خطیب نے تفصیل سے روشنی ڈالتے ہوئے موجودہ سودی نظام اور اسلام میں اس کی جس شدت سے حرمت کا ذکر قران و احادیث میں آیا ہے اس کو پیش کیا اور اس کے متبادل نظام بلا سودی معشیت کو فروغ دینے کے لیے ہمیں کوشش کرنا چاہیے اس کی پر زور وکالت کی ۔بلا سودی معشیت آج دنیا کی ضرورت ہے اور یہی نظام رحمت ہے ،جو انسانوں کی بھلائی کے لیے ہوسکتا ہے ،سودی نظام انسانوں کے استحصال اور ظلم و بربادی کا ہی ذریعہ بن سکتا ہے آسانی اور سہولت کے لیے نہیں۔
راحت اربن کے بورڈ آف ڈائریکٹر کے رکن جاوید چودھری نے بلاسودی سوسائٹیز کی اہمیت اور معاشرے میں ان کی ضرورت پر سیر حاصل گفتگو کی ۔راحت اربن کے چیف پروموٹر ڈاکٹر ذاکر انعامدار نے ممبر سازی مہم کا تفصیلی کاکہ پیش کیا ۔مجلس علما ءکے ناظم مظفر خان نے اس پروگرام کی نظامت کے فرائض انجام دیئے ۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔