بابری مسجد مسئلہ پر مسلمان فراخدلی کا مظاہر کریں

0 20

اب غیور الحسن رضوی سرگرم ۔ عدالت سے باہر تصفیہ کیلئے مصالحت

نئی دہلی 18 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) قومی اقلیتی کمیشن کے صدرنشین غیور الحسن رضوی نے آج کہا کہ وہ ایودھیا ( بابری مسجد ۔ رام جنم بھومی ) مسئلہ میں مصالحت کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس مسئلہ کے عدالت کے باہر تصفیہ کیلئے فریقین سے بات چیت کرینگے ۔ انہوں نے مسلمانوں سے بھی اپیل کی کہ وہ فراخدلی کا مظاہرہ کریں کیونکہ یہ ہندووں کیلئے عقیدہ کا مسئلہ ہے ۔ رضوی نے کہا کہ وہ اپنی مصالحت میں مسلمانوں کیلئے یہ تیقن حاصل کرنے کی کوشش کرینگے کہ اگر مسلمان ایودھیا مسئلہ کے حل کیلئے راضی ہوجائیں تو پھر دوسری مقامات جیسے کاشی اور متھرا میں دیگر مساجد کیلئے کوئی تنازعہ پیدا نہیں ہوگا ۔ پی ٹی آئی کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کمیشن نے 14 نومبر کو اپنے اجلاس میں انہیں اختیار دیا ہے کہ اگر وہ چاہیں تو اس مسئلہ پر مصالحت کریں۔ اب وہ عدالت سے باہر تصفیہ کیلئے فریقین سے بات چیت کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کا ماننا ہے کہ عدالت کا فیصلہ ایک فریق کے حق میں اور دوسرے کے خلاف ہوگا ایسے میں بہتر یہی ہوگا کہ عدالت کے باہر تصفیہ کرلیا جائے ۔