ویکسین لینے کے فوری بعد کانسٹبلوں میں بے چینی اور بے ہوشی کی علامات ظاہر ہونے لگی، دواخانہ میں شریک
ایودھیا : سبھی خاتون کانسٹیبل ایودھیا میں رام جنم بھومی چیکنگ پوائنٹ پر تعینات تھیں۔ کورونا ٹیکہ کاری مہم کے تحت جمعہ کو ہیلتھ ورکرس کو ٹیکہ لگایا گیا تھا اور ان خواتین کی بھی ٹیکہ کاری ہوئی تھی۔ہندوستان میں جاری کورونا ٹیکہ کاری مہم کے دوران اتر پردیش سے ایک تشویشناک خبر سامنے آئی ہے۔ ہفتہ کے روز ایودھیا میں رام جنم بھومی کی جگہ چیکنگ پوائنٹ پر تعینات سات خاتون کانسٹیبل کی کورونا ویکسین لینے کے بعد حالت بگڑ گئی۔

ان سبھی کو بے چینی اور بیہوشی کی علامات کے بعد ایودھیا واقع شری رام اسپتال میں داخل کروایا گیا ہے۔ ان سبھی کو جمعہ کے روز ٹیکہ لگایا گیا تھا۔میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی اطلاعات کے مطابق سبھی خاتون کانسٹیبل ایودھیا میں رام جنم بھومی میں داخلے کیلئے قائم چیکنگ پوائنٹ کے لیے بنائے گئے تین بوتھوں پر تعینات تھیں۔ کورونا ٹیکہ کاری مہم کے تحت ہیلتھ ورکرس اور فرنٹ لائن ورکرس کی ٹیکہ کاری مہم کے تحت سبھی کو جمعہ کے روز کورونا ویکسین لگائی گئی تھی۔

ہفتہ کے روز 7 خاتون کانسٹیبل کی طبیعت اچانک بگڑ جانے سے ایک ہنگامہ برپا ہو گیا۔ آناً فاناً میں ان سبھی خاتون کانسٹیبل کو مقامی شری رام اسپتال میں داخل کرایا گیا۔اسپتال کے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ گھبرانے کی کوئی بات نہیں ہے کیونکہ سبھی خاتون ڈاکٹروں کو نگرانی میں رکھا گیا ہے۔

انھوں نے یہ بھی بتایا کہ کورونا ویکسین دیے جانے کے بعد یہ علامات ظاہر ہونے عام بات ہیں۔ ویکسین لگوانے کے بعد اس طرح کی پریشانیاں آ سکتی ہیں اور اس سے گھبرانے کی قطعی ضرورت نہیں ہے۔ ڈاکٹروں نے بتایا کہ سبھی خاتون کانسٹیبل کا بلڈ پریشر معمول پر ہے او ران کی حالت بھی ٹھیک ہے۔


اپنی رائے یہاں لکھیں