نئی دہلی، 27 نومبر (یو این آئی) میگھالیہ کی نیشنل پیپلز پارٹی (این پی پی) نے آج یہاں نیشنل ڈیموکریٹک الائنس (این ڈی اے) کے اتحادیوں کی میٹنگ میں پیر سے شروع ہونے والے پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس سے پہلے شہریت ترمیمی ایکٹ (سی اے اے) کو منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا۔این پی پی سے لوک سبھا رکن اگاتھا سنگما نے میٹنگ میں یہ مسئلہ اٹھایا۔محترمہ سنگما نے میٹنگ کے بعد صحافیوں کو بتایاکہ "حکومت نے لوگوں کے جذبات کو مدنظر رکھتے ہوئے زراعت سے متعلق قوانین کو منسوخ کرنے کا اعلان کیا ہے، میں نے ان سے شمال مشرق کے لوگوں کے جذبات کو مدنظر رکھتے ہوئے سی اے اے کو ختم کرنے کی اپیل کی ہے۔

"ذرائع نے بتایا کہ اپنا دل کی رکن پارلیمنٹ اور مرکزی وزیر انوپریہ پٹیل نے میٹنگ میں ذات پر مبنی مردم شماری کا مسئلہ اٹھایا۔ اجلاس میں حکومت کے اتحادیوں نے پارلیمنٹ کے کام کو احسن طریقے سے چلانے کے لیے حکومت کو تعاون کی یقین دہانی کرائی۔میٹنگ کے بعد پارلیمانی امور کے وزیر مملکت ارجن رام میگھوال نے بتایا کہ حکومت پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس میں کسی بھی موضوع پر بحث و مباحثہ کے لیے تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اپوزیشن سے بحث کی اپیل کی ہے اور ہم حکومت کی جانب سے ہر معاملے پر بحث کر کے آپ کو جواب دینا چاہتے ہیں۔

اس سے قبل بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی پارلیمانی ایگزیکٹو پارٹی کا اجلاس بھی ہوا۔ پارٹی کے صدر جگت پرکاش نڈا نے ممبران پارلیمنٹ سے اپیل کی کہ وہ اجلاس کے دوران موجود رہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تمام مسائل پر بشمول زرعی قوانین اور پیگاسس جاسوسی تنازعہ جیسے مسائل پر اپوزیشن کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہے۔اجلاس میں اراکین پارلیمنٹ کو پارلیمنٹ میں پیش کیے جانے والے بلوں سے بھی آگاہ کیا گیا۔

 

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔