خصوصی سینسر کا استعمال ۔ گھر کے سامنے چھت پر نصب کرنے کا منصوبہ

وارانسی۔ کورونا کی وبا کے دوبارہ پھیلاؤ کی وجہ سے جہاں حکومت فکر مند ہے وہیں لوگوں کو بھی یہ خوف ستا رہا ہے کہ ہندوؤں کے بڑے تہواروں میں سے ایک ہولی کے موقع پر کہیں ان کے رنگ میں بھنگ نہ پڑ جائے۔ ہولی کے موقع پر لوگوں کے سماجی فاصلہ کے اصول پر عمل کرنا بھی مشکل ہے، لہذا وزیر اعظم نریندر مودی کے پارلیمانی حلقہ انتخاب کے نوجوانوں نے ایک ایسی پچکاری تیار کی ہے جو سوشل ڈسٹنسنگ پر عمل کرانے میں کارگر ثابت ہوگی۔ خصوصی سینسر سے مزین یہ پچکاری ایک دوسرے سے چھوئے بغیر رنگوں میں شرابور کرے گی اور لوگوں کے سوشل ڈسٹنسنگ کی خلاف ورزی پر آگاہ کرے گی۔ اشوکا انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی اینڈ مینجمنٹ کے طالب علم وشال پٹیل نے اس پچکاری کو تیار کیا ہے۔ انہوں نے آئی اے این ایس کے ساتھ خصوصی گفتگو میں کہا کہ ہولی کے تہوار کا لطف کورونا کی وجہ سے ماند نہیں پڑنا چاہیے، لہذا ہم نے اینٹی کورونا پچکاری تیار کی ہے، جو حکومت کے جاری کردہ رہنما اصولوں کے ساتھ ساتھ لوگوں کو رنگوں میں بھی شرابور کرے گی۔ انہوں نے بتایا کہ پچکاری کو گھر کے سامنے چھت پر رکھی جائے گی۔ جیسے ہی کوئی اس کے سامنے آئے گا، اس کے سینسر متحرک ہو جائیں گے اور وہ رنگوں کی بوچھار کرنے لگی گی۔ جب تک کوئی پچکاری کے سامنے نہیں آئے گا، پچکاری کا رنگ باہر نہیں آئے گا۔ یہ خود کار پچکاری کورونا سے مقابلہ میں کارگر ثابت ہوگی۔ اس کے علاوہ اس پچکاری کا استعمال سینی ٹائز کرنے میں بھی کیا جا سکتا ہے۔


اپنی رائے یہاں لکھیں