نئی دہلی، 09 جولائی (یو این آئی) سینٹرل انسٹی ٹیوٹ آف سب ٹراپیکل ہارٹیکلچر (سی آئی ایس ایچ) لکھنؤ نے اینٹی ذیابطیس خوبیوں سے بھرپور پورے ملک کی جامن کی ساٹھ اعلیٰ قسموں کا کلیکشن کیا ہے جو اب پھل بھی دینے لگے ہیں۔

انسٹی ٹیوٹ نے ملک کے مختلف حصوں سے جامن کی بہترین قسموں کا کلیکشن کیا ہے جو نہ صرف گودے سے بھرپور ہیں بلکہ یہ میٹھے بھی ہیں، کم کسیلے ہیں اور ان کی بیج (تخم) بہت چھوٹے ہیں۔ ساٹھ طرح کے جامن کا پورے ملک سے انتخاب کیا گیا ہے جن میں سے 38 اب پھل دینے لگے ہیں۔ اتر پردیش کے علاوہ مہاراشٹر، گجرات، مغربی بنگال، بہار، ہریانہ، چھتیس گڑھ اور تملناڈو سے جامن کی قسموں کو لایا گیا ہے۔ جامن کی زیادہ تر قسمیں اینٹی ذیابطیس خوبیوں بھرپور ہے جو بایو ایکٹیوعناصر کا خزانہ ہے۔

انسٹی ٹیوٹ نے جامن کی ایسی قسموں کو ترقی دی ہے جو کھانے میں لذیذ ہیں ہی اس کی پروسیسنگ بھی کی جا سکتی ہے۔ کھانے والی قسموں میں اچھی مقدار میں گودا ہونا ضروری ہے اور اسی کے ساتھ ہی اس کے بیج اتنے نازک ہیں جسے انگور کے بیج کی طرح چبایا بھی جا سکے۔ انسٹی ٹیوٹ نے جامن کی ایک بیج کے علاوہ قسم سی آئی ایس ایچ جامن 42 کو ترقی دی ہے، یہ انڈے کی شکل کی ہے اور پھل کا وزن آٹھ گرام ہے۔