واشنگٹن: ٹیسلا کے سی ای او ایلون مسک نے مائیکرو بلاگنگ کی سائٹ ٹوئٹر کو 41 بلین ڈالر میں خریدنے کی پیشکش کی ہے۔ خیال رہے کہ دنیا کے امیر ترین شخص ایلون مسک نے حال ہی میں ٹوئٹر کے 9 اعشاریہ 2 فیصد حصص خریدے ہیں۔ تاہم انہوں نے کہا ہے کہ وہ ٹوئٹر کے بورڈ آف ڈائریکٹرز میں شامل نہیں ہوں گے۔

ایلون مسک نے ٹوئٹر کو 54.20 ڈالر فی شیئر کی قیمت پر خریدنے کی پیشکش کی ہے، جوکہ ٹوئٹر کے یکم اپریل کے شیئر کے کلوزنگ ریٹ سے 38 فیصد زیادہ ہے۔ ایلون مسلک کے اس آفر کے بعد پری مارکٹ ٹریڈنگ میں ٹوئٹر کے شیئرز میں 12 فیصد کی تیزی نظر آئی۔

ایلون مسک نے ٹوئٹر کے چیئرمین بریٹ ٹیلر کو ارسال کئے گئے ایک خط میں لکھا ہے، اپنی سرمایہ کاری کرنے کے بعد سے اب میں نے یہ محسوس کیا ہے کہ کمپنی اپنی موجودہ شکل میں نہ تو ترقی کرے گی اور نہ ہی سماجی ضرورت کو پورا کر پائے گی۔ ٹویٹر کو ایک نجی کمپنی میں تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔ مسک نے کہا، ’’میری پیشکش بہترین اور حتمی ہے اور اگر اسے قبول نہیں کیا جاتا تو مجھے بطور شیئر ہولڈر اپنی پوزیشن پر نظر ثانی کرنا ہوگی۔”

اس سے قبل ایلون مسک نے ٹوئٹر کے بورڈ میں شامل ہونے سے انکار کر دیا تھا۔ ٹوئٹر کے سی ای او پراگ اگروال نے اس کی اطلاع دی تھی۔ پراگ اگروال نے ٹویٹ کیاکہ، میں نے ایلون مسک کے بورڈ میں شامل ہونے کے بارے میں ان سے کئی بار بات کی۔ ہم تعاون کرنے اور جوکھم کو واضح کرنے کے لیے پرجوش تھے۔ ہمیں یہ بھی یقین تھا کہ ایلون کو کمپنی کے معاون کے طور پر رکھا گیا تھا، جہاں وہ تمام بورڈ ممبران کی طرح ہمارے تمام شیئر ہولڈرز کے بہترین مفاد میں کام کریں، جو کہ بہترین عمل تھا۔ بورڈ نے انہیں ایک نشست کی پیشکش کی تھی۔