ایشیا کپ سے پاکستانی تیز گیندباز شاہین آفریدی باہر

500

ایشیا کپ شروع ہونے میں چند ہی روز باقی رہ گئے ہیں، ایسے میں پاکستانی ٹیم کو ایک بری خبر ملی ہے۔ تیز گیندباز شاہین آفریدی چوٹ کی وجہ سے ایشیا کپ سے باہر ہو گئے ہیں۔ یہ پاکستانی ٹیم کے لیے زوردار جھٹکا ہے کیونکہ وہ ٹیم میں تیز گیندبازی کی ریڑھ تصور کیے جاتے ہیں۔

بتایا جا رہا ہے کہ شاہین آفریدی انگلینڈ کے خلاف گھریلو سیریز میں بھی نہیں کھیل پائیں گے۔قابل ذکر ہے کہ پاکستان کو ایشیا کپ میں پہلا میچ ہندوستان کے ساتھ 28 اگست کو کھیلنا ہے۔ ایسے میں شاہین آفریدی کے نہیں کھیلنے سے ہندوستانی ٹیم کو فائدہ ملے گا۔ ٹی-20 عالمی کپ 2020 میں پاکستان نے جب ہندوستان کو شکست دی تھی تو اس میں شاہین آفریدی نے اہم کردار نبھایا تھا۔ انھوں نے 31 رن دے کر 3 وکٹ لیے تھے جس میں کے ایل راہل، وراٹ کوہلی اور روہت شرما کا وکٹ شامل تھا۔

ان تینوں ہی بلے بازوں کو بائیں ہاتھ کی گیندبازی کھیلنے میں زیادہ پریشانی ہوتی ہے، اس لیے شاہین آفریدی کا نہ ہونا ان کے لیے سکون کا سانس لینے والی بات ہے۔امید کی جا رہی ہے کہ شاہین آفریدی آسٹریلیا میں ہونے والے آئی سی سی ٹی-20 عالمی کپ سے پہلے صحت یاب ہو جائیں گے۔ یعنی وہ ٹی-20 عالمی کپ میں کھیلتے ہوئے نظر آ سکتے ہیں۔ واضح رہے کہ گالے میں سری لنکا کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ کے دوران فیلڈنگ کے دوران انھیں چوٹ لگ گئی تھی۔ اس کے بعد وہ کسی میچ میں نہیں کھیل سکے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف میڈیکل افسر ڈاکٹر نجیب اللہ سومرو نے کہا کہ ’’وہ اس خبر سے کافی پریشان ہیں۔ وہ اس ٹورنامنٹ میں کھیلنا چاہتے ہیں لیکن ان کی چوٹ وقت پر ٹھیک نہیں ہو پائے گی۔‘‘