ایس آر ٹی سینیٹ انتخابات : مہا ویکاس اگھاڑی کے پینل کی شاندار کامیابی

574

ناندیڑ:17نومبر ( ورقِ تازہ نیوز) سوامی رامانند تیرتھ مراٹھواڑہ یونیورسٹی کے سینیٹ الیکشن کے نتائج کا تقریباً 18 گھنٹے بعد اعلان کیا گیا ہے اور اس انتخاب میں مہاوکاس اگھاڑی کے گیا ن تیرتھ پینل نے شاندار جیت حاصل کی ہے۔ اس پینل کے امیدوار دس میں سے نو نشستیں جیت چکے ہیں۔

اس الیکشن میں بی جے پی کی قیادت والی اے بی وی پی کے ودیا پیٹھ وکاس منچ کے امیدوار کو شکست ہوئی ہے۔ سابق وزیر اعلی اشوک راو¿ چوہان کی قیادت میں لڑے گئے انتخابات میں مہاوکاس اگھاڑی نے اکیلے ہی کامیابی حاصل کی۔13 نومبر کو سوامی رامانند تیرتھا مراٹھواڑہ یونیورسٹی میں سینیٹ کے انتخابات ہوئے۔ ووٹوں کی گنتی 16 تاریخ کو صبح آٹھ بجے شروع ہوئی۔ ووٹوں کی گنتی 17 تاریخ کی صبح تک جاری رہی۔ جس کے بعد دس نشستوں کے انتخابات کے نتائج کا اعلان کیا گیا۔

اس الیکشن میں مہا وکاس اگھاڑی نے کانگریس کی پہل پر دس میں سے دس امیدوار کھڑے کیے تھے، وہیں بی جے پی کی طلبہ تنظیم اے بی وی پی نے بھی ودیا پیٹھ وکاس منچ کے ذریعے انتخاب لڑا تھا۔دس نشستوں کے لیے 41 امیدوار انتخابی میدان میں اترے تھے۔ مہیش ماگر، نارائن چودھری، یوراج پاٹل، ونود مانے نے اوپن کیٹیگری سے اس میں کامیابی حاصل کی۔ اجے گایکواڑ نے درج فہرست ذاتوں کے لیے مخصوص نشست جیتی۔

ہنمنت کندھاکر نے شہریوں کے پسماندہ زمرے سے، آکاش ریجیتواڈ نے شیڈول ٹرائب کے زمرے سے، گجانن اسولکر نے خانہ بدوش ذات کے قبیلے سے اور شیتل سونٹکے نے خواتین کے لیے مخصوص نشست جیتی۔سابق وزیر اعلی اشوک راو¿ چوہان اور سابق سرپرست وزیر ڈی پی ساونت کی قیادت میں گیان تیرتھ پینل نے یکطرفہ طور پر لگاتار پانچویں بار یہ انتخاب جیت لیا ہے۔ 2001 سے، سوامی رامانند تیرتھا مراٹھواڑہ یونیورسٹی کی سینیٹ پر غیر متنازعہ طور پر کانگریس کا غلبہ رہا ہے۔