ایران:کورو ناوائر س سے ایک اوررکن پارلیمنٹ ہلاک‘اب تک145ہلاکتیں

تہران :ایرانی پارلیمنٹ کی ایک اور رکن کورونا وائرس کا شکار ہونے کے باعث ہلاک ہوگئی ہیں جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ مہلک مرض کس قدر تیزی کے ساتھ اعلیٰ ریاستی اداروں میں پھیل رہا ہے۔ایران کی نیم سرکاری نیوز ایجنسی تسنیم کے مطابق کورونا وائرس کی وجہ سے جمعے کو ہلاک ہونے والی 55 سالہ فاطمی رہبر تہران سے تعلق رکھنے والی ایک قدامت پسند قانون ساز تھیں۔ وہ حال ہی میں ایرانی پارلیمنٹ کی رکن منتخب ہوئی تھیں۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق وہ ایران میں کورونا وائرس کی وجہ سے ہلاک ہونے والی دوسری رکن پارلیمنٹ ہیں۔ ایران میں دو اراکین پارلیمنٹ کے علاوہ اب تک سات سیاستدان اور سرکاری اہلکار بھی کورونا کے باعث ہلاک ہوچکے ہیں۔ایران کی وزارت صحت کے ترجمان کے مطابق سنیچر تک ملک میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 145 تک پہنچ گئی ہے جبکہ اس سے اب تک پانچ ہزار 823 افراد متاثر ہوچکے ہیں۔

ملک میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اس مرض سے 21 نئی ہلاکتیں رپورٹ ہوئی ہیں جبکہ اس کے ایک ہزار 76 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔وزارت صحت کے ترجمان کیانوش جہاں پور نے بتایا ہے کہ اس وقت کورونا وائرس کے 16 ہزار سے زائد مشتبہ افراد ملک کے مختلف ہسپتالوں میں داخل ہیں
۔جمعے کو ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف کے مشیر حسین شیخ الااسلام بھی کورونا وائرس کی وجہ سے ہلاک ہو گئے تھے۔