BiP Urdu News Groups

دہلی سے ملحق اتر پردیش کے نوئیڈا میں ایک سنسنی خیز معاملہ سامنے آیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ مسلم لڑکی سے تقریباً چھ مہینے قبل شادی کرنے والے ہندو نوجوان کا کسی نے قتل کر دیا ہے۔ نوجوان کی لاش بوٹنیکل گارڈن میٹرو اسٹیشن کے پاس واقع بیت الخلاء سے برآمد ہوئی ہے۔ منگل کے روز جیسے ہی یہ خبر پھیلی کہ بیت الخلاء میں جس شخص کی لاش برآمد ہوئی ہے وہ ہندو ہے اور اس نے ایک مسلم لڑکی سے شادی کی تھی، تو علاقے میں ایک ہنگامہ سا برپا ہو گیا۔

پولس بیت الخلاء سے لاش برآمد ہونے کی خبر ملتے ہی فوراً بوٹنیکل گارڈن پہنچی اور لاش کو اپنے قبضے میں لے لیا۔ پولس نے جانچ شروع کر دی ہے اور اس کا کہنا ہے کہ نوجوان کے گلے پر دھار دار اسلحہ چلانے کا نشان ہے، حالانکہ کچھ بھی حتمی طور پر پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد ہی پتہ چل پائے گا۔

میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق نوئیڈا کے سیکٹر 39 تھانہ حلقہ میں پڑنے والے بوٹنیکل گارڈن میٹرو اسٹیشن سے جس نوجوان کی لاش برآمد ہوئی ہے اس کا نام رادھے چوہان ہے۔ پولس کے حوالے سے یہ بھی بتایا جا رہا ہے کہ لڑکے نے تقریباً چھ مہینے قبل ایک مسلم لڑکی سے شادی کی تھی جس کا نام شہناز ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ نوجوان کی عمر 27 سال ہے اور وہ سیکٹر 55 کی جھگی بستی میں رہتا تھا۔

پولس نے رادھے چوہان کے تعلق سے ملی جانکاری کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ وہ نشے کا عادی تھا اور چونکہ چھ مہینے پہلے اس نے ایک مسلم لڑکی سے شادی کی تھی، اس لیے ہر زاویہ سے جانچ کرنے کا فیصلہ لیا گیا ہے۔ ابھی تک یہ پتہ نہیں چل سکا ہے کہ قتل میں کس کا ہاتھ ہو سکتا ہے، یا پھر رادھے کے ساتھ کسی کی رنجش تھی یا نہیں۔ رادھے کے گھر والوں سے جب بات کی گئی تو انھوں نے پولس کو بتایا کہ وہ تقریباً دو مہینے سے گھر سے باہر تھا۔