ممبئی 3 اپریل (یواین آئی) آئی پی ایل کے 14 ویں سیشن کو شروع ہونے میں جب ایک ہفتہ سے بھی کم وقت بچاہے اور ایسے میں دہلی کیپٹلس اور چنئی سپرکنگز ( سی ایس کے) کے سامنے خطرہ پیداہوگیا ہے۔دراصل دہلی کیپٹلس کے اسٹارآل راونڈر اکشرپٹیل اور سی ایس کے کا اسٹاف ممبر کورونا متاثرپایا گیا ہے۔ اکشر گزشتہ 28 مارچ کو کوروناٹیسٹ رپورٹ منفی آنے کے بعد ٹیم میں شامل ہوئے تھے، لیکن دوبارہ ہوئے ٹیسٹ میں وہ وائرس سے متاثر پائے گئے۔ فی الحال انہیں طبی نگرانی کے تحت رکھاگیا ہے۔

وہیں سی ایس کے کی کنٹنٹ ٹیم کا ایک ممبر بھی کورونا سے متاثرپایاگیا ہے جو فی الحال آئسولیشن میں ہے۔ سی ا یس کے کے چیف ایگزیکٹو افسر (سی ای او) کاشی وشوناتھ نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ ممبر کھلاڑیوں یا کسی بھی اسسٹنٹ ملازمین کے رابطے میں نہیں تھا اور کوروناٹیسٹ رپورٹ مثبت آنے سے پہلے بھی الگ رہ رہاتھا۔

فرنچائزیوں کے علاوہ ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم کے کئی گراونڈورکروں کے بھی کورونا سے متاثر پائے جانے کی خبریں سامنے آئی ہیں، حالانکہ ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن ( ایم سی اے) کے ذرائع نے یہ کہتے ہوئے ان خبروں کو مستردکیا ہے کہ بعد میں گراونڈاسٹاف منفی آیا تھا، لیکن ممبئی میں جوحالات ہیں اس کے حساب سے آئی پی ایل کے اس سیشن کے پہلے پندرہ روز میں 10 میچوں کی میزبانی کرناتھوڑا سنگین ہوسکتا ہے، کیونکہ مہاراشٹر کے وزیراعلیٰ ادھو ٹھاکرے نے بھی ریاست میں دوبارہ لاک ڈاون لگنے کے امکان کو خارج نہیں کیا ہے۔بی سی سی آئی کورونا سے بنے اس بحران کے تعلق سے ابھی تک فرنچائزیوں تک نہیں پہنچ پایا ہے، لیکن افسر اس کے متبادل کے بارے میں غورکررہے ہیں۔