کلکتہ ، 29 جنوری (یواین آئی)ریٹائرڈ منٹ سے تین مہینے قبل ہی چند ن نگر پولس کمشنرہمایوں کبیر نے آج اپنی ملازمت سے استعفیٰ دیدیا ہے ۔خبر گردش کررہی ہے کہ وہ سیاست میں شامل ہوں گے ۔تاہم ہمایوں کبیر نے کہا ہے کہ وہ ذاتی وجوہات کی بنیاد پر استعفیٰ دے رہے ہیں ۔چندن نگر پولس کمشنریٹ کے عہدہ سے آج ہی ان کا تبادلہ کیا گیا اور ان کی جگہ گوراب شرما کوذمہ داری دی گئی ہے۔

ٹرانسفر کا آرڈرآنے کے بعد ہی ہمایوں کبیر نے استعفیٰ دینے کا اعلان کرتے ہوئے اپنا استعفیٰ اعلیٰ حکام کو بھیج دیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وہ 31 جنوری کے بعد کام نہیں کریں گے۔ اس استعفے کے بارے میں قیاس آرائیاں شروع ہوگئی ہیں۔ سیاسی حلقوں کے مطابق وہ سیاست میں اپنی قسمت آزما سکتے ہیں ۔وہ پہلے سے ہی اقلیتی مسائل پر بولتے رہے ہیں ۔2003 بیچ کے آئی پی ایس ہمایوں کبیرسابق وزیراعلیٰ بدھدیب بھٹاچاریہ کے بہت قریبی بھی جانے جاتے تھے۔انہوں نے 2016 تک ایک فلم کی ہدایتکاری بھی کی۔

مرشدآباد میں پولس سپرنڈنٹ کے دوران ان پر ایک خاتون نے عصمت دری کا الزام عاید کیا تھا ۔ان دنوں پر ان ترنمول کانگریس کے لئے کام کرنے کا الزام عاید کیا تھا ۔لوک سبھا انتخابات میں الیکشن کمیشن نے انہیں عہدہ سے ہٹادیا تھا ۔ہمایوں کبیر استعفیٰ دینے کے بعد کس پارٹی میں شامل ہوں گے ۔اب تک انہوں نے کچھ بھی اشارہ نہیں دیا ہے۔امید ہے کہ 31جنوری کے بعد وہ اپنی پوزیشن واضح کریں گے۔