اورنگ آباد: کچرا چننے والے مزدوروں کو اجرت کے بقایہ جات ادا کریں: کامگار سنگٹھناکی کارپوریشن دفتر پر ہڑتال

0 2

اورنگ آباد:(جمیل شیخ): شہر میں کچرا چننے والے مزدوں کو کام کی اجرت فوری ادا کی جائے اور ان کے سبھی جائز مطالبات جلد پورے کئے جائیں۔ اس مطالبے پر کاغذ کانچ اورپترا کامگارے سنگٹھنا کی جانب سے کارپوریشن دفتر پر ہڑتال شروع کی گئی۔ گذشتہ سال فروری میں کچرا صفائی اور اسے ٹھکانے لگانے کا مسئلہ پیدا ہونے کے بعد اپریل 2018 میں کچرا صفائی کے کام پر ان خواتین کو لگایاگیا تھا جو شہر میں گلی گلی گھوم کر کچرا کانچ او رپترا چنتے ہیں۔

میونسپل کارپوریشن انتظامیہ نے انھیں شناختی کارڈ دینے اور کام کا معاوضہ ادا کرنے کا وعدہ کیا تھا۔ کانچ کاغذ اور پترا کامگار سنگٹھنا ساتھی سبھاش لومٹے نے صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کارپوریشن 134 مزدوروں کو شناختی کارڈ جاری لیککن اب بھی 114 مزدوروں کو شناختی کارڈ نہیں دئے گئے۔ سالیڈ ویسٹ منجمنٹ سے متعلق کچرا صفائی کرنے والے ان مزدوروں کو اب تک کارپوریشن کی ملازمت میں شامل نہیں کیاگیا۔ اسی طرح انھو ںنے جو کام کیا اس کا معاوضہ بھی انھیں ادا نہیں کیاگیا۔ لومٹے نے بتایا کہ ان مطالبات کو جلد پورا کرنے کا وعدہ خود میئر نند کمار گھوڑیلے نے کیا تھا لیکن اب تک وہ پورا نہ ہونے پر مجبور کاغذ کانچ پترا کامگار سنگٹھنا کی قیادت میں خواتین نے بے مدت ہڑتال شروع کی ہے اور میئر میونسپل کارپوریشن انتظامیہ مزدوں کے جائز مطالبات کی یکسوئی نہیں کرتا یہ ہڑتال یونہی جاری رہیگی۔