Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

اورنگ آباد میں نوجوانوں کا پولس پر حملہ انتہائی شرمناک اور قابل مذمت واقعہ: امتیاز جلیل

IMG_20190630_195052.JPG

اورنگ آباد،9 اپریل (یو این آئی)کورونا وائرس کے پس منظر میں اورنگ آباد میں آج ایک افسوس ناک اور قابل مذمت واقعہ پیش آیا۔ اورنگ آباد میں کلکٹر آفس کے قریب تعینات ٹریفک پولس کانسٹیلوں نے جب ایک موٹرسائکل پر سوار تین نوجوانوں کو روکنے کی کوشش کی تو ان نوجوانوں نے پولس والوں پر حملہ کر دیا اور فرار ہو گیے۔ دو پولس کانسٹبل زخمی ہوئے ہیں۔ پولس نے ان نوجوانوں کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔

اورنگ آباد کے رکن پارلیمنٹ امتیاز جلیل نے اس ضمن میں یو این آئی سے بات کرتے ہوئے اسے انتہائی شرمناک اور قابل افسوس قرار دینے ہوئے شدید مذمت کی۔ انھوں نے کہا کہ چند لڑکوں کو غلط حرکت کی وجہ سے پوری قوم بدنام ہوتی ہے۔

اس ضمن میں انھوں نے یہ بھی واضح کیا کہ اگر پولس کی جانب سے ان لڑکوں کے ساتھ مارپیٹ کی گئی تھی تو انھوں نے اس کی شکایت پولس کمشنر سے کرنی چاہئے تھی۔ ایسا نہ کر کے انھوں نے پولس پر جو حملہ کیا وہ قابل مذمت اور قوم کے لیے بدنامی اور رسوائی کا باعث ہے۔ دوسری طرف انھوں نے پولس والوں کو بھی یہ یاد دلایا کہ انھیں عوام کے ساتھ مار پیٹ نہیں کرنی چاہئےبلکہ اگر کوئی خلاف ورزی کرتا ہوا پایا جائے تو اس کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے۔

کورونا وائزس سے عوام کی حفاظت کی خاطر ، احتیاطی تدابیر اختیار کرنے، لوگوں کو گھروں پر ہی رہنے اور غیر ضروری سڑکوں پر نہ نکلنے کے احکامات بار بار دیے جانے کے باوجود بھی بہت سے لوگ غیر ضروری سڑکوں پر گھوم رہے ہیں۔

دریں اثنا، اورنگ آباد میں کورونا وائرس کے 3 اور نئے کیس ملنے کے بعد اب اورنگ آباد میں مریضوں کی تعداد 17 ہو چکی ہے۔ جس کی وجہ سے پولس کمشنر چرنجو پرساد نے مزید سخت احکامات جاری کیے ہیں۔ اور کل رات سے شام 7 بجے سے صبح تک سخت کرفیو کا اعلان کیا گیاہے۔ سوائے میڈیکل اسٹور کے اور کوئی دوکان کھلی رکھنے کی اجازت نہیں۔