Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

اورنگ آباد میں دردناک حادثہ، پٹری پر سوئے مزدوروں پر چڑھ گئی ٹرین، 17 ہلاک

IMG_20190630_195052.JPG

پی ایم نریندر مودی نے حادثہ پر افسوس ظاہر کیا ہے اور کہا ہے کہ ”میں نے وزیر ریل پیوش گویل سے بات چیت کی ہے وہ اس معاملے پر باریکی سے نظر رکھے ہوئے ہیں۔ ہر طرح کی ضروری مدد کی جا رہی ہے۔“

لاک ڈاؤن کے درمیان مسائل سے دو چار مہاجر مزدوروں کا اپنی ریاستوں کی طرف سفر جاری ہے اور مہاراشٹر کے اورنگ آباد میں یہی سفر کچھ مزدوروں کے لیے آخری سفر بن گیا۔ جب کچھ مہاجر مزدور مدھیہ پردیش کے لیے ٹرین پکڑنے بھساول کی طرف جا رہے تھے تو راستے میں رات ہو گئی اور وہ پٹری پر ہی سو گئے۔ جمعہ کی علی الصبح ایک مال گاڑی ان پر سے گزر گئی اور اس واقعہ میں 17 مزدور موت کی نیند سو گئے۔ کم و بیش 4 مزدور سنگین طور پر زخمی بھی ہوئے ہیں جنھیں قریب کے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

اس واقعہ پر پی ایم نریندر مودی افسوس کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ

"میں نے وزیر ریل پیوش گویل سے بات چیت کی ہے وہ اس معاملے پر باریکی سے نظر رکھے ہوئے ہیں۔ ہر طرح کی ضروری مدد کی جا رہی ہے۔” وزارت ریل کا بھی اس حادثہ کے تعلق سے بیان سامنے آیا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ "آج صبح ٹریک پر کچھ مزدوروں کو دیکھنے کے بعد مال گاڑی کے لوکو پائلٹ نے ٹرین کو روکنے کی کوشش کی، لیکن پربھنی-منماڈ سیکشن کے بدن پور اور کرماڈ اسٹیشنوں کے درمیان انھیں ٹکر لگ گئی۔ زخمیوں کو اورنگ آباد سول اسپتال لے جایا گیا ہے۔ جانچ کے حکم دے دیے گئے ہیں۔”

بتایا جاتا ہے کہ یہ حادثہ اورنگ آباد-جالنا ریلوے لائن پر ہوا۔ کرماڈ پولس واقعہ کی اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچ گئی اور زخمیوں کو اسپتال بھیجا۔ بتایا جاتا ہے کہ فلائی اوور کے پاس پٹری پر مزدور سوئے ہوئے تھے جب ریل گاڑی ان کے اوپر سے گزر گئی۔ یہ مہاجر مزدور جالنہ میں آئرین فیکٹری میں کام کرتے تھے اور جب انھیں پتہ چلا کہ بھساول سے مدھیہ پردیش کے لیے ٹرین روانہ ہونے والی ہے تو ایک ساتھ ٹرین پکڑنے نکل پڑے تھے۔

خبروں کے مطابق مزدورں نے تقریباً 40 سے 45 کلو میٹر کا سفر طے کیا تھا اور پھر بدنا پور و کرماڈ کے درمیان بوقت رات پٹری پر ہی سو گئے تھے۔ وہ یہ سوچ رہے ہوں گے کہ ٹرین تو چل نہیں رہی ہے اس لیے انھیں کسی طرح کی پریشانی نہیں ہوگی۔ میڈیا ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ سبھی مزدور مدھیہ پردیش کے شہڈول کے باشندہ ہیں۔ اس واقعہ کے تعلق سے ساؤتھ سنٹرل ریلوے کے پی آر او نے بتایا کہ مال گاڑی کی خالی ریک تھی جو ان مزدوروں کے اوپر سے گزر گئی۔ واقعہ کی اطلاع ملنے کے بعد آر پی ایف اور مقامی پولس موقع پر پہنچی اور فوری کارروائی شروع ہوئی۔

اس واقعہ میں جو 4 مزدور سنگین طور پر زخمی ہوئے ہیں انھیں اورنگ آباد کے سول اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ اورنگ آباد کی ایس پی موکشدا پاٹل کا کہنا ہے کہ مہلوکین میں خاتون اور بچے شامل نہیں ہیں اور سبھی بھساول سے مزدور اسپیشل ٹرین کے ذریعہ مدھیہ پردیش لوٹنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔ موکشدا پاٹل نے بتایا کہ جو 4 لوگ زخمی ہوئے ہیں وہ دور بیٹھے ہوئے تھے اور ان سے حادثہ کے تعلق سے پوچھ تاچھ کی جا رہی ہے۔