اورنگ آباد شہر میں مسلم نوجوان کو ہجومی تشدد کا نشانہ بنانے کی ناکام کوشش

0 6
متوفی عمران پٹیل

اورنگ آباد:19 جولائی (ذوالقرنین احمد). کل رات اورنگ آباد میں عمران اسمعیل پٹیل نام کے نوجوان کو شر پسند عناصر کی طرف سے ہجومی دہشت گردی کا نشانہ بنانے کی ناکام کوشش کی گئی.

ویڈیو

اورنگ آباد میں کل رات ایک مسلم نوجوان عمران اسمعیل پٹیل (پیشہ ہوٹل ویٹر) کو جو کام پر سے اپنے گھر لوٹ رہا تھا، کچھ فرقہ پرست عناصر نے اسکی گاڑی روک کر چابی چھین لی اور عمران کو ہندو مذہبی نعرے لگانے کیلئے کہاں جس پر عمران نے ڈر کر "جئے شری رام” کے نعرے بھی لگائے اور پھر وہ‌ لوگوں نے اسے مارنا شروع کردیا تقریبا ۱۰ نامعلوم افراد تھے۔ وہ عمران کو جان سے مارنا چاہتے تھے۔ یہ واقعہ ہڈکو کارنر علاقہ میں ایک مندر کے قریب رات تقریباً 12:30 بجے پیش آیا جب علاقہ سنسان تھا.

لیکن عمران کی چلانے کی آواز سے قریب میں واقع ایک غیر مسلم گھر کے افراد نے اسکی جان بچالی ورنہ شرپسند پتھر لے کر عمران پٹیل کو جان سے مارنے کی پوری تیاری کرچکے تھے.

گنیش بھائی ٹینٹ والے اور انکی فیملی نے وہاں آکر خود کی جان جوکھم میں ڈالتے ہوئے متوفی عمران پٹیل کو بچایا اور ہندوں مسلم. بھائی چارے کی مثال قائم کردی.

8- 10 نا معلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ شہر کے ذمہ دار اور ایم آئی ایم کے لیڈران نے مسلم نوجوانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ امن و امان قائم رکھیں،قانونی طور پر کاروائی جاری ہے۔

آج ایڈوکیٹ قضر پٹیل کی قیادت میں پولس اسٹیشن میں نامعلوم افراد کے خلاف دفعہ 153 اے و دیگر کے تحت مقدمہ درج کیا گیا پولس نے مجرموں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا یقین دلایا۔