Waraqu E Taza Online
Nanded Urdu News Portal - ناندیڑ اردو نیوز پورٹل

اورنگ آباد زنجیری احتجاج کا آٹھواں دن

IMG_20190630_195052.JPG

اورنگ آباد:( شہاب مرزا )شہریت ترمیم قانون نافذ کرنے کے بعد لگاتار ایک مہینے سے احتجاج کر رہی ہ شاہین باغ کی خواتین پورے ملک کی جمہوریت پسند عوام کے لئے ایک مثال پیش کر رہی ہے ملک کی تاریخ کا مطالعہ کیا جائے تو یہ پہلا موقع ہے جب اتنی تعداد میں عوام سڑکوں پر ہے اور خاص بات یہ ہے کہ خواتین جو کبھی احتجاج کا حصہ نہیں بنتی لیکن اب وہ بھی اپنے مطالبات کے لیے ٹھٹھرتی سردی میں ڈٹی ہوئی ہے کہ جب تک حکومت اس قانون کو واپس نہیں لیتی تب تک احتجاج جاری رہے گا شاہین باغ کی خواتین کا احتجاج کے بعد اور ان کے جذبے سے متاثر ہوکر اورنگ باد کے درد مند نوجوانوں نے شہر میں ایک اور شاہین باقی بنیاد ڈالی اورنگ آباد کی زنجیری احتجاج کا آٹھواں دن ہے شاہین باغ کی آگ اورنگ آباد سے ہوتے ہوئے پورے ملک میں پھیل رہی ہے

اس زنجیری احتجاج کو کئی تنظیموں کی جانب سے تائید کا اعلان کیا گیا ہے یہ احتجاج ہفتے کے 7 دن اور دن کے 24 گھنٹے جاری ہے یہ احتجاج کسی جماعت یا تنظیم کی جانب سے نہیں ہے بلکہ اورنگ آباد کے درد مند نوجوانوں کی جانب سے شاہین باغ کی خواتین کے حوصلے کو سلام کرنے اور ان کی محنت کو تقویت دینے کی چھوٹی کوشش ہیں

اس زنجیری احتجاج میں مولانا عبدالقوی فلاحی نے سیرت کی روشنی میں شہادت کے مفہوم پر خطاب کیا اور جدوجہد سے کامیابی تک کہ موضوع کو واضح کیا اس طرح انا کھنڈرارے نے کہا میں نے بابری مسجد جیل بھرو آندولن میں پولیس کمیشنر آفس وکرم اسٹیڈیم میں لاٹھی کھائی تھی میں اب بھی مسلمانوں کے ساتھ کاندھے سے کاندھا ملا کر کھڑا ہوں اب وقت آیا تو پھر سے لاٹھی کھاؤں گا لیکن اس قانون کی مخالفت کرتا رہو گا

ایڈوکیٹ ابھے ٹکسال نے اپنے خطاب میں کہا کہ حکومت زیادتی پر اتر آئی ہے یہ قانون آئین مخالف ہے حکومت ملک کی عوام کو مذہب کے آئینے سے دیکھ رہی ہے لیکن ہم اسے کسی بھی قیمت پر برداشت نہیں کریں گے

شاہین باغ کے نمائندے صادق افضل نے بھی اس زنجیریں احتجاج میں خصوصی شرکت کی اور شاہین باغ کی آنکھوں دیکھی روداد بیان کی اور وہاں کے جذباتی مناظر روبرو کروایا اور ترنم بھری آواز میں نظم پیش کی اور اورنگ آباد کے نوجوانوں کی ہمت افزائی کی

تحریک صدا حق (اہلسنت والجماعت) کے علماء کرام نے بھی اس زنجیری احتجاج میں شرکت کی اور احتجاج کے منتظمین کو بھی دعا سے نوازا تحریر صدائے حق کے مولانا شریف نظامی صاحب نے خطاب پیش کیا

یہ احتجاج آٹھویں دن میں داخل ہوا اور لگاتار جاری رہے گا اس احتجاج میں خواتین کے لیے دوپہر 2 بجے سے شام 6 بجے تک طے کیا گیا ہے اس اوقات میں خواتین کثیر تعداد میں شرکت کریں کیونکہ یہ تحریک خواتین کی جانب سے شروع کی گئی تھی اور شہریان سے بھی گزارش ہے کہ اس احتجاج میں شریک رہیں