سابق پولیس ملازم سمیت2 گرفتار، ایس آئی ٹی کی کارروائی
ممبئی : امبانی کے گھر کے سامنے جلیٹن اسٹکس سے بھری ایک اسکارپیو کار کھڑی کرنے کے کیس کے سلسلہ میں کارروائی کرتے ہوئے مہاراشٹرا انسداد دہشت گردی اسکواڈ نے سابق پولیس ملازم کے بشمول دو افراد کو گرفتار کیا ہے ۔ اے ٹی ایس نے اس کیس کے سلسلہ میں تھانے کے آٹو پارٹس تاجر کی موت کی بھی کڑی جوڑتے ہوئے تحقیقات شروع کی ہے ۔ تاجر کے اس ماہ کے اوائل میں قتل ہوا تھا ۔ صنعت کار مکیش امبانی کی ممبئی رہائش گاہ کے قریب دھماکو اشیاء سے لدی ہوئی جو کار پائی گئی تھی اُسی کیس کے سلسلہ میں تحقیقات کی جارہی ہے ۔ کار ایس یو وی کے مالک کا پتہ چلانے کیلئے تحقیقات کی جارہی تھی کہ اس تاجر کا پتہ چلا اور ممبئی کے پولیس سچن ویزے کو معطل کیا گیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ این آئی نے اس سلسلہ میں انہیں گرفتار کیا گیا جو مبینہ طور پر کار کے مالک کے قریبی تعلقات رکھتے ہیں ۔ اے ٹی ایس نے سابق پولیس ملازم 55سالہ ونائیک شنڈے اور ایک سٹہ باز 31سالہ نریش دھرے کو تھانے کے آٹو پارٹس ڈیلر منشکھ ہیران کے قتل کے سلسلہ میں گرفتار کیا گیا ہے ۔ ان دونوں ملزمین کو پوچھ گچھ کیلئے اے ٹی ایس کے ہیڈ کوارٹر طلب کیا گیا تھا اس کے بعد انہیں حراست میں لے لیا گیا ۔مہاراشٹرا کے وزارت داخلہ نے اس کیس کی تحقیقات این آئی اے کے حوالے کی تھی ۔ شنڈے فرضی شوٹ آؤٹ کیس میں ماخوذ ہے اور وہ پیرول پر رہا ہوا ہے ۔ تھانے کے تاجر کی نعش ممبرا کریک میں5مارچ کو پائی گئی تھی ۔ بتایا جاتا ہے کہ اس تاجر نے 17فبروری کو کار ایس یو وی کا سرقہ کیا تھا ۔ معطل شدہ پولیس عہدیدار ویزے پر الزام ہے کہ انہوں نے 5فبروری کو کار واپس کر نے سے پہلے اس کار کو چار ماہ تک استعمال کیا تھا ۔ ایس یو وی کار میں ایک مکتوب دستیاب ہوا تھا جس میں امبانی کے خاندان کو دھمکی دی گئی تھی ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں