• 425
    Shares

کابل : طالبان کے ایک ترجمان نے کہا ہے کہ وفد کے حکام نے چین کو بتایا ہے کہ وہ دوسرے ملک کے خلاف سازشوں کے لیے افغانستان کو اڈے کے طور پر استعمال نہیں ہونے دیں گے۔افغان طالبان کے ترجمان محمد نعیم نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو چہارشنبہکو بتایا کہ طالبان کا ایک اعلیٰ سطح کا وفد بیجنگ حکام سے بات چیت کے لیے چین میں موجود ہے۔خیال رہے کہ مسلح گروہ کے جانب سے افغانستان میں حملے جاری ہیں، ان میں سرحدوں کے قریب واقع علاقے بھی شامل ہیں۔نو رکنی وفد کی قیادت ملاح عبدالغنی برادر کر رہے ہیں۔محمد نعیم کا کہنا ہے کہ ’امارتِ اسلامی نے چین کو یقین دلایا ہے کہ افغانستان کی سرزمین کسی بھی ملک کی سکیورٹی کے خلاف استعمال نہیں ہوگی۔‘ان کا مزید کہنا تھا کہ ’انہوں (چین) نے وعدہ کیا ہے کہ وہ افغانستان کے معاملات میں مداخلت نہیں کریں گے اور اس کے بجائے مسائل حل کرنے اور امن لانے میں مدد کریں گے۔‘خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق محمد نعیم کا کہنا ہے کہ طالبان وفد نے چین کے افغانستان کے لیے خصوصی سفیر سے بھی ملاقات ہوئی اور یہ دورہ چینی حکام کی دعوت پر کیا گیا۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔ 


اپنی رائے یہاں لکھیں