• 425
    Shares

امریکہ کے انٹیلیجنس حکام کا کہنا ہے کہ ایک سے دو سال کے اندر اندر کالعدم تنظیم القاعدہ افغانستان میں رہتے ہوئے امریکہ کے لیے ایک خطرہ بن سکتی ہے۔

امریکی خفیہ اداروں کے دو سینیئر اہلکاروں نے متنبہ کیا ہے کہ انٹیلیجنس ذرائع کے مطابق افغانستان میں القاعدہ کی واپسی کی ابتدائی علامات دیکھی جاسکتی ہیں۔

خیال رہے کہ غیر ملکی افواج کی افغانستان مداخلت اور دہشتگردی کے خلاف کارروائی کے بعد یہ دعویٰ کیا گیا تھا کہ ملک سے القاعدہ کو کافی حد تک ختم کیا جاچکا ہے۔

قومی سلامتی پر ایک اجلاس میں سینٹرل انٹیلیجنس ایجنسی (سی آئی اے) کے ڈپٹی ڈائریکٹر ڈیوڈ کوہن کا کہنا تھا کہ ’ہمیں ابتدائی طور پر کچھ علامات نظر آئی ہیں جن میں ممکنہ طور پر القاعدہ کی جانب سے افغانستان میں واپسی کی جا رہی ہے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’یہ فی الحال (اس کے) ابتدائی دن ہیں اور ظاہر ہے ہم اس پر نظر رکھیں گے۔‘

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔