پرتاپ گڑھ ۔ یو پی پرتاپ گڑھ ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت نے اغوا و آبروریزی کے مقدمہ میںخاطی ثابت ہونے کے بعد بی جے پی لیڈر سمیت دو ملزمان کو بیس – بیس سال قید بامشقت و جرمانہ کی سزا سنائی ۔ استغاثہ کے بموجب ایک شخص نے 10/ جنوری 2011 کو شکایت کر الزام عائد کیا کہ اس کی 15 سالہ بیٹی کو گورنمنٹ گرلز انٹر کالج گئی تھی ، شام کو واپس نہیں آئی تو معلوم ہواکہ راجو ہرجن اس کو لے کر فرار ہے ۔وہ راجو کے مالک ستیہ پرکاش گپتا (بی جے پی لیڈر) سے دریافت کیا تو انہوں نے کہا کہ دو روز میں آ جائیگی ۔تقریبا چھہ ماہ بعد اس کی بیٹی روڈویز بس اسٹیشن کے نزدیک ملی تھی ۔پولیس شکایت کی بنیاد پر اغوا و آبروریزی کا کیس درج کر فرد جرم عدالت میں پیش کیا ۔عدالت نے دوشنبہ کو مقدمہ کی سماعت کرتے ہوئے وکلاء کے استدلال سننے کے بعد شواہد کی بنیاد پر خاطی ثابت ہونے کے شبب ملزم ستیہ پرکاش گپتا و راجو کو بیس بیس سال قید بامشقت و ڈھائ لاکھ روپیہ جرمانہ کی سزا سنائی ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں