اعظم خان نے لی راحت کی سانس، جوہر یونیورسٹی کے خلاف کارروائی پر ’سپریم‘ روک

سماجوادی پارٹی کے سرکردہ لیڈر اور گزشتہ دنوں جیل سے ضمانت پر رِہا ہوئے اعظم خان کو آج ایک بڑی خوشخبری ملی۔ سپریم کورٹ نے رام پور واقع جوہر یونیورسٹی کے کچھ حصوں کو گرانے کی کارروائی پر روک لگا دی ہے۔ عدالت عظمیٰ کے اس حکم کے بعد اعظم خان نے راحت کی سانس لی کیونکہ وہ اس بات کو لے کر فکرمند تھے کہ مقامی انتظامیہ یونیورسٹی کے کچھ حصوں کو منہدم نہ کر دے۔
!
میڈیا رپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ نے جوہر یونیورسٹی کے خلاف کارروائی پر روک لگانے کے ساتھ ساتھ اتر پردیش حکومت کو نوٹس بھی جاری کیا ہے۔ عدالت کا کہنا ہے کہ پہلی نظر میں الٰہ آباد ہائی کورٹ کی ضمانت کی شرط بے ڈھنگی لگتی ہے۔

دراصل اعظم خان نے الٰہ آباد ہائی کورٹ کے ذریعہ لگائی گئی ضمانت کی شرط کو سپریم کورٹ میں چیلنج پیش کیا تھا۔ انھوں نے اپنی عرضی میں بتایا تھا کہ ایک کیس میں ضمانت دیتے وقت الٰہ آباد ہائی کورٹ نے یونیورسٹی کی 13.8 ہیکٹیر زمین انتظامیہ کو قبضے میں لینے کی اجازت دی ہے۔