• 425
    Shares

مقبوضہ بیت المقدس میں قابض اسرائیل کی جارحیت جاری ہے، قابض اسرائیلی انتظامیہ نے مسجد اقصیٰ کے نزدیک مسلمانوں کا قدیم ترین قبرستان مسمار کردیا۔عرب میڈیا کے مطابق قابض اسرائیلی انتظامیہ نے بلڈوزروں سے ال یوسفیہی قبرستان کی قبریں مسمار کیں۔ علاقہ مکینوں کی مزاحمت پر اسرائیلی انتظامیہ کو کام روکنا پڑا۔

واقعہ کے خلاف فلسطینیوں کے احتجاجی مظاہرے پر اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے دو مظاہرین زخمی ہوگئے۔ قبرستان میں 1948 سے 1967 کے درمیان شہید ہونے والے فلسطینی شہدا کی قبریں موجود ہیں۔قابض اسرائیلی انتظامیہ پارک بنانے کے لیے قبرستان کی زمین پر قبضہ کرنا چاہتی ہے، اسرائیل نے 2016 میں بھی قدیم ترین باب الرحمہ قبرستان کی قبریں مسمار کی تھیں۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔