رملہ : فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے اور بیت المقدس میں گزشتہ روز اسرائیلی فوج کی گھر گھر تلاشی مہم کے دوران اسلامی تحریک مزاحمت حماس کے رہنماؤں، ارکان اسمبلی اور دیگر سرکردہ شہریوں سمیت 42 افراد کو حراست میں لے لیا گیا۔ فلسطینی اُمور اسیران کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ قابض فوج نے غرب اردن اور القدس میں گھر گھر تلاشی کے دوران 42 افراد کو حراست میں لے لیا۔ اسرائیلی فوج نے تلاشی کی کارروائیوں میں گھروں میں گھس کر توڑ پھوڑ اور لوٹ مار کی۔ رملہ میں تلاشی کے دوران 10 فلسطینیوں کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔ مشرقی رملہ میں سلواد کے مقام سے 6 فلسطینی، سابق اسیر اور شہید انس کے والد بسام حماد، فرید النجار، قاسم ریاض، لوئی فارس، عبدالرحمان حبش اور محمد حبش کو گرفتار کیا گیا۔ یبرو کے مقام پر تلاشی کے دوران رائد حامد، سالم قطش، بیت ریما سے سابق اسیران عبدالرحمان الریماوی اور سام الاسمر کو گرفتار کیا۔ غرب ادن کے جنوبی شہر الخلیل سے 9 فلسطینیوں کو گرفتار کیا گیا۔ ان میں فلسطینی پارلیمنٹ کے رکن خلیل ربعی بھی شامل ہیں۔ بعدازاں انہیں رہا کردیا گیا۔ گرفتار کئے گئے دیگر فلسطینیوں میں ناصر ربعی، فضل جبارین، جبرایل العمور، فادی العمور، محمد العمور، سامر وبابسہ، یحییٰ ابو صبحہ اور زکریا ابو فنار شامل ہیں۔ الخلیل میں سموع کے مقام سے حمزہ الرواشد کے نام سے فلسطینی کو گرفتار کیا گیا۔