ٹی وی مبلغ عدنان اختر کو جنسی زیادتی کے الزام میں 8,658 سال قید کی سزا

742

استنبول: استنبول کی ایک عدالت نے چہارشنبہ کے روز ایک مسلمان ٹی وی مبلغ عدنان اختر کو جنسی زیادتی کے ایک مقدمہ کی دوبارہ سماعت کے بعد 8,658 سال قید کی سزا سنائی ہے۔

عدنان اختر، ترکیے کا بدنام زمانہ ٹی وی مبلغ ہے جو مختصر لباس اور گہرے میک اپ میں بے پردہ و بے حجاب خواتین کے گھیرے میں بیٹھ کر اسلام کی تبلیغ کرنے کا دعویٰ کرتا تھا۔

عدنان اختر ٹیلی ویژن کے ایسے پروگرامس چلاتا تھا جس میں خواتین بہت زیادہ میک اپ اور چھوٹے کپڑے پہنتی تھیں جبکہ وہ تخلیقیت اور قدامت پسند اقدار کی تبلیغ کا دعویٰ کرتا تھا۔

گزشتہ سال، 66 سالہ عدنان اختر کو جنسی زیادتی، نابالغ لڑکیوں کے ساتھ جنسی زیادتی، دھوکہ دہی اور سیاسی اور فوجی جاسوسی کی کوشش سمیت دیگر جرائم کے لئے 1,075 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی تاہم اس فیصلے کو ایک اعلیٰ عدالت نے مسترد کر دیا تھا۔