امان: اردن کی جیلوں میں قیدیوں کی تعداد حد سے تجاوز کرنے پر حکومت ’الیکٹرونک ٹیگ‘ کے منصوبے پر کام کررہی ہے جس کے تحت مخصوص قیدیوں کو ٹیگ لگا کر آزادی دی جائے گی۔اردن کے قید خانوں میں قیدیوں کی گنجائش ختم ہورہی ہے جس کے پیش نظر الیکٹرونک ٹیگ منصوبہ لایا جائے گا، اس اقدام کے تحت ابتدا میں ممکنہ طور پر 1 ہزار 500 کے قریب قیدیوں کو جیل سے رہائی ملے گی لیکن ملزمان کے ٹخنوں پر نصب الیکٹرانک ٹیگ سے ان پر نظر رکھی جائے گی کیوں کہ وہ آزادی کے بعد بھی ملزم ہی تصور کیے جائیں گے۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ اردنی حکومت جیل میں قیدیوں کی گنجائش کو برقرار رکھنے کے لیے یہ اقدام اٹھا رہی ہے جبکہ عدالت کی جانب سے اس منصوبے کی منظوری کا انتظار ہے۔