ادھو ٹھاکرے وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دیں گے؟

فی الحال، مہاراشٹر میں سیاسی تعطل ہے۔ شیوسینا کے باغی لیڈر ایکناتھ شندے نے ریاستی سیاست میں بڑا بم گرایا ہے۔ شندے اس وقت کچھ ایم ایل اے کے ساتھ گوہاٹی میں ہیں۔ ریاست میں حکومت کی تبدیلی کی بات ہو رہی ہے اور توقع ہے کہ وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے آج استعفیٰ دے دیں گے۔ ذرائع نے بتایا کہ چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے آج شام تک استعفیٰ دے سکتے ہیں، کیونکہ وہ اس تجویز کو خود رکھیں گے۔

چیف منسٹر کے عہدے سے استعفیٰ دینے سے پہلے ادھو ٹھاکرے اپنے باقی ایم ایل ایز کے ساتھ ممبران پارلیمنٹ سے بات چیت کریں گے۔ اس کے بعد یہ بڑا فیصلہ لینے سے پہلے وہ اکیلے این سی پی لیڈر شرد پوار سے ملاقات کریں گے اور بات چیت کریں گے۔ معلوم ہوا ہے کہ وہ کانگریس لیڈر بالا صاحب تھوراٹ سے بھی بات چیت کریں گے۔

کہا جا رہا ہے کہ ادھو ٹھاکرے کے استعفیٰ کا فیصلہ شرد پوار سے بات چیت کے بعد ہی کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ حکومت کو برطرف کرنے کی سفارش کریں گے۔ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ وزیر اعلیٰ ٹھاکرے خود اس سلسلے میں گورنر کو خط لکھیں گے۔

سنجے راوت کے ٹویٹ کا کیا مطلب ہے؟

سنجے راوت نے اپنے آفیشل ٹویٹر ہینڈل سے ٹویٹ کیا کہ ’’مہاراشٹر میں سیاسی پیش رفت قانون ساز اسمبلی کو برخاست کرنے کی طرف بڑھ رہی ہے…‘‘ سنجے راوت کے ٹویٹ نے ریاست کی سیاست میں ہلچل مچا دی ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ سنجے راوت نے بالواسطہ طور پر وزیر اعلیٰ ادھو ٹھاکرے کے استعفیٰ کا اشارہ دیا ہے۔