نیویارک: گزشتہ امریکی انتخابات کے بعد سے فیس بک پر سیاست اور انتخابات پر اثرانداز ہونے کے الزامات تسلسل کے ساتھ عائد ہوتے آ رہے ہیں اور اب فیس بک کے بانی مارک زکربرگ نے اس حوالے سے اہم اعلان کر دیا ہے . انڈیا ٹائمز کے مطابق مارک زکربرگ نے کہا ہے کہ وہ فیس بک پر سیاسی ایجنڈے کو یکسر روکنے کے لیے اقدامات کر رہے ہیں اور ایسی پوسٹس صارفین کو تجویز کی جائیں گی اور نہ ہی زیادہ دکھائی جائیں گی جن میں سیاسی مواد موجود ہو گا .

رپورٹ کے مطابق فیس بک کی طرف سے یہ فیصلہ امریکی انتخابات پر اثرانداز ہونے کے الزامات اور رواں ماہ کے آغاز میں امریکی کانگریس کی عمارت پر ہونے والے حملے کے پیش نظر کیا گیا ہے. اس فیصلے کے تحت سیاسی ایجنڈے پر کام کرنے والے گروپس ، پیجز اور ان کی پوسٹس کو صارفین کے لیے تجویز (Recommend)نہیں کیا جائے گا. مارک زکربرگ کا کہنا تھا کہ ”صارفین نہیں چاہتے کہ سیاست اور سیاسی لڑائی ہماری سروسز پر غالب آ جائے جس پر ہم نے سیاسی مواد کی حوصلہ شکنی کا فیصلہ کیا ہے.“