افکو نے مفت آکسیجن دستیاب کرانے کیلئے تیسری اکائی کی منظوری ،راجستھان میں آکسیجن اور ریمڈیسیور کی سربراہی کی کوششیں جاری

نئی دہلی : مرکزی حکومت نے ملک میں کورونا مریضوں کے لئے آکسیجن کی کمی کے پیش نظر تمام سرکردہ بندرگاہوں پر ان کی ڈھلائی کرنے والے تمام جہازوں کو ٹیکس سے مستثنیٰ کردیا ہے ۔جہاز رانی اور آبی گزرگاہ کے وزیر منسسکھ لال مانڈویہ نے اتوار کے روز ٹویٹ کیا کہ تمام بڑی بندرگاہوں پر آکسیجن اور اس سے متعلق سازو سامان کی نقل و حمل کو ڈیوٹی سے مستثنیٰ کردیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ بندرگاہ انتظامیہ سے آکسیجن کی نقل و حمل اور اس سے وابستہ تمام سازو سامان کو ترجیح دینے کے لئے بھی کہا گیا ہے ۔ قابل ذکر بات یہ ہے کہ کورونا مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد میں آکسیجن کی زبردست قلت کے پیش نظر حکومت نے اس کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے تمام ضروری اقدامات شروع کردیئے ہیں۔ وزارت جہازرانی نے بھی اسی صورتحال کے پیش نظر یہ فیصلہ لیا ہے ۔نئی دہلی: انڈین فارمس فرٹیلائزرز کو آپریٹیو (افکو) نے قوم کی خدمت کے تحت اسپتالوں کو مفت آکسیجن دستیاب کرانے کے لئے تیسری اکائی لگانے کو منظوری دی ہے ۔افکو کے منیجنگ ڈائرکٹر یو ایس اوستھی نے اتوار کو ٹوئٹ کرکے کہا کہ میڈیکل گریڈ آکسیجن کی مانگ کو پورا کرنے کے لئے اترپردیش کے پھول پور مین تیسرا آکسیجن پلانٹ لگانے کا حکم دیا گیا ہے ۔ اس سے پہلے دو آکسیجن پلانٹ لگانے کو منظوری دی گئی تھی۔اس پلانت کی پیداواری صلاحیت 130 کیوبک میٹر فی گھنٹہ ہوگی۔ اس میں 30 مئی تک پیداوار شروع ہوجانے کا امکان ہے ۔ افکو نے اس کام کے لئے ایک خصوصی ٹیم کو لگایا ہے ۔افکو اترپردیش اور اس کے آس پاس کے علاقوں میں مفت آکسیجن دستیاب کرائے گا۔دریں اثناء جئے پور سے موصولہ اطلاع کے بموجب راجستھان کے میڈیکل اینڈ ہیلتھ کے وزیر ڈاکٹر رگھو شرما نے کہا ہے کہ ریاست میں کورونا انفیکشن کی روک تھام اور علاج کے لئے جانچ کی سہولت اور ضرورت کے مطابق آکسیجن بیڈ کی تعداد میں مسلسل اضافے کے ساتھ آکسیجن اور ریمڈیسیویر سمیت دیگر دوائیوں کی سپلائی کے لئے ہر ممکن کوششیں کی جارہی ہیں۔ ڈاکٹر شرما نے آج اپنے بیان میں یہ بات کہی۔ انہوں نے کہا کہ کورونا ویکسینیشن کو ترجیح دینے کے نتیجے میں راجستھان کو ملک کی سرکردہ ریاستوں میں شامل کیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ فی الحال کورونہ ٹیسٹنگ کی صلاحیت یومیہ 86 ہزار ہوچکی ہے اور ہر روز تقریباً80 ہزار ٹیسٹ کیے جارہے ہیں۔ تمام جانچ آر ٹی پی سی آر کررہی ہے اور یہ ٹیسٹ کی سہولت تمام اضلاع میں دستیاب ہے ۔ ریاست میں 38 سرکاری اور 29 پرائیویٹ سمیت 67 جانچ لیبارٹریز سرگرم عمل ہیں۔ پرائیویٹ اسپتالوں اور پرائیویٹ لیبوں میں آر ٹی پی سی آر کی زیادہ سے زیادہ شرح 350 روپے مقرر کی گئی ہے ، جو ملک میں سب سے کم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جانچ کی گنجائش ایک لاکھ کی جارہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست میں ہیلتھ انفراسٹرکچر کو مضبوط بنانے پر خصوصی زور دیا جارہا ہے اور گذشتہ ایک سال کے دوران سات ہزار 500 آکسیجن سپورٹیڈ بیڈ اور 1750 آئی سی یو بیڈز کا اضافہ کیا گیا ہے ۔ اس وقت ریاست میں 14 ہزار 389 آکسیجن سپورٹیڈ بیڈ اور 4 ہزار 477 آئی سی یو بیڈز دستیاب ہیں۔ پچھلے ایک سال کے دوران ، 43 اسپتالوں میں 125 ٹن پیدواری صلاحیت کے آکسیجن جنریشن پلانٹ لگائے گئے ۔


اپنی رائے یہاں لکھیں