آج ناندیڑ کے شاہین باغ میں سابق آئی پی ایس آفیسر عبدالرحمن کاخطاب

ناندیڑ:7مارچ (ورق تاز ہ نیوز)شہریت ترمیمی قانون ،این آرسی اور این پی آر کےخلاف کل جماعتی تحریک کی جانب سے چلائی جارہی احتجاجی تحریک میں اب تک کئی نامور ہستیوں نے شرکت کی اور احتجاج کررہے لوگوں کا حوصلہ بڑھایا ۔ساتھ ہی شہریت ترمیمی قانون ،این آرسی اور این پی آر کی وجہ سے مستقبل قریب میں پیش آنے والے سنگین مسئلہ کے بارے میں جان کاری دی ۔

اسی سلسلہ کی ایک کڑی کے طورپر ۸ مارچ عالمی یوم خواتین کے موقع پر شاہین باغ ناندیڑ کی آواز احتجاجی دھرنے میں سابق آئی پی ایس آفیسر عبدالرحمن جنہوں نے حال ہی میں شہریت ترمیمی قانون ،این آرسی اور این پی آر کےخلاف ناراضگی ظاہر کرنے کےلئے اپنے عہدے اور ملازمت سے استعفیٰ دیدیا ہے ۔وہ شریک ہورہے ہیں ۔عام طورپر اتوار کا دن صبح سے لیکر شام پانچ بجے کے دوران احتجاجی دھرنے میں خواتین کے لئے مختص ہوتاہے تاہم اس مرتبہ معروف شخصیت سابق آئی پی ایس آفیسر عبدالرحمن صاحب کی شرکت کو دیکھتے ہوئے خواتین کے ساتھ ساتھ مرد حضرات کو بھی اس میں شریک ہونے کی اپیل کل جماعتی تحریک کے ذمہ داران مولانا ایوب قاسمی ،مولانا سرور قاسمی اور مولانا آصف ندوی نے کیا ہے ۔

اس سلسلہ میں کل جماعتی تحریک کے ذمہ داران نے میڈیا نمائندوں سے تاثرات ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ سابق آئی پی ایس آفیسر عبدالرحمن صاحب نے شہریت ترمیمی قانون ،این آرسی اور این پی آر کےخلاف اپنے عہدے سے جو استعفیٰ دیا ہے وہ بہت بڑی قربانی ہے ہمیں اس کی قدر کرنا چاہئے ۔آج جس مشن کو لیکر وہ چل رہے ہیں اس میں ہمیں بھی پوری طرح سے شامل ہوجانا وقت کی اہم ضرورت ہے اسلئے ۸ مارچ کو ہونے والے پروگرام میں تمام لوگوں سے پرخلوص گذارش کی جاتی ہے کہ وہ اپنے قیمتی وقت کو فارغ کریں اور دھرنے میں شریک ہوکر ملی بیداری کا ثبوت دے ۔