ناندیڑ:21 نومبر۔(ورق تازہ نیوز)ریاست کے تین مقامات پر رونما ہوئے کچھ ناخوشگوارواقعات کے بعد بی جے پی نے ریاست بھر میں 22نومبر کو تمام ضلع کلکٹر دفاتر کے روبرو احتجاجی دھرنا منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ناندیڑ میں بھی صبح گیارہ بجے ضلع کلکٹر آفس کے روبرو دھرنارکھاگیا ہے جس میں امراوتی کے بی جے پی لیڈر وسابقہ ریاستی وزیر ڈاکٹرانیل بونڈے بھی شرکت کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ بونڈے پر امراوتی میں 13نومبر کوفساد برپا کرنے کاالزام ہے اور انھیں گرفتاربھی کیاگیاتھا ۔ ناندیڑکے دھرنے میں ایم پی پرتاپ پاٹل چکھلی کر ‘ یم ایل سی رام پاٹل راتولی کر ‘ ایم ایل اے تشاراٹھوڑ‘ ایم ایل اے راجیش پوار بھی شرکت کررہے ہیں۔ بی جے پی کے شہر صدرپروین سالے نے ورکرس سے اس دھرنے میں کثیرتعداد میںشرکت کی اپیل کی ہے ۔

ناندیڑمیں صبح گیارہ بجے سے دھرنا شروع ہوجائے گا جس کے اختتام پر ضلع کلکٹرکو مطالبات پر مبنی میمورنڈم پیش کیاجائے گا۔اس دھرنے کے پیش نظر ناندیڑ میں پولس نے سخت انتظامات کئے ہیں ۔ اس سے قبل بھی مختلف ہندوتنظیموں نے 16نومبر کوناندیڑمیں مورچہ نکالنے کافیصلہ کیاتھا لیکن پولس کی درخواست پر یہ مورچہ منسوخ کردیاگیاتھا ۔ لیکن اب بی جے پی سیاسی فایدے کے لئے ریاست بھر میں 22نومبر کو دھرنے دینے کافیصلہ کیا ہے ۔ناندیڑمیں یہ افواہ بھی پھیلی ہوئی کہ 22نومبر کوناندیڑبند رکھاگیا ہے ۔لیکن ایسا کچھ نہیں ہے ۔ عوام اپنے کاروبارحسب معمول اس دن بھی جاری رکھیں ۔

ورق تازہ نیوز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں  https://t.me/waraquetazaonlineاور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔