آئیڈیل گروپ آف اسکولز و جونیر کالج تھانے کی پچاس سالہ تقریبات کامیابی سے ہم کنار جلد ہی سینئر کالج قائم کرنے کا عزم

آئیڈیل گروپ آف اسکولز و جونیر کالج تھانے کی پچاس سالہ تقریبات کامیابی سے ہم کنار
جلد ہی سینئر کالج قائم کرنے کا عزم
تھانے (آفتاب شیخ)
تھانے کے قدیم مسلم آبادی والے علاقے رابوڑی میں پچاس سال پہلے سن ١٩٦٩ میں چند نیک روحوں اور معماران قوم نے اس ادارہ کی بنیاد رکھی اور کامیابی کے ساتھ اس کی شمع روشن رکھی اور گزشتہ پچاس سالوں سے قوم کے مستقبل کے لیے اپنی خدمات انجام دے رہے ہیں۔ ادارہ کے پچاس سال مکمل ہونے پر آئیڈیل ایجوکیشن سوسائٹی کی جانب سے کاشی ناتھ گھانیکر آڈیٹوریم تھانے میں پرشکوہ گولڈن جوبلی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں اسکول کے طلباء و ان کے والدین، سابق طلباء، اساتذہ و سابق اساتذہ، سول سوسائٹی کے ذمہ داران کی بڑی تعداد کے علاوہ آئیڈیل ایجوکیشن سوسائٹی و انجمن اسلام کے صدر ڈاکٹر ظہیر قاضی اور تھانے میونسپل کارپوریشن کے سابق حزب اختلاف لیڈر و کوکن مرکنٹائل بینک کے چیرمین کارپوریٹر نجیب ملا نے خصوصی شرکت فرمائی۔ تلاوت قرآن پاک سے تقریب کی شروعات ہوئی اور اس کے بعد بچیوں نے خوبصورت انداز میں استقبالیہ نغمہ پیش کیا۔ پرائمری اسکول سے جونیر کالج تک کے طلباء نے مل کر ترانہ آئیڈیل پیش کیا۔اسکول کے سابق طلباء جس میں صحافی و سماجی کارکن آفتاب شیخ، کانٹریکٹر شعیب گھاوٹے، چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ رونق خان، ڈاکٹر سفیان گھاوٹے، ڈاکٹر ہما شفیع خان جنہوں اپنے اپنے شعبوں میں نمایاں کارکردگی انجام دی ہے اور اپنے ساتھ اسکول کا بھی نام روشن کیا انہیں اسکول کے صدر ڈاکٹر ظہیر قاضی صدر انجمن اسلام ممبی کے ہاتھوں مومینٹو دیکر حوصلہ افزائی کی گئی۔ ثقافتی سالانہ جلسہ میں بچہ مزدوری پر بھی بچوں نے ایکٹ پیش کر روشنی ڈالی گئی اور اساتذہ کے کے ذریعے تیار کیے گئے تمام ایکٹ میں ایک سماجی پیغام دیا گیا۔ رضوان حارث آئیڈیل ہائی اسکول کی پرنسپل مہر بانو شیخ اور شمش الدین گھاوٹے آئیڈیل پرائمری اسکول کی پرنسپل کھوت منیزہ نے بھی اسکول کی تدریسی، غیر تدریسی و تعلیمی کارکردگی پر روشنی ڈالی۔ رابوڑی کے کے اہم دینی و سماجی اداروں کو بھی مومینٹو پیش کیا گیا جس میں مومن پورہ جمعہ مسجد ٹرسٹ، رابوڑی مسجد ٹرسٹ، اسلامی دینی جماعت، رابوڑی فرینڈ سرکل، مسلم ایجوکیشنل اینڈ ویلفیئر ایسوسی ایشن (میوا) اور انجمن خاندیش
کے صدور و نمائندہ اور آئیڈیل ایجوکیشن سوسائٹی کے بنیادی اراکین جو حیات ہے انہیں اسٹیج پر بلاکر مومینٹو و شال پیش کیا گیا۔ ڈاکٹر ظہیر قاضی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اسکول کے سابق صدر آنجہانی شام سندر شرما کے متعلق روشنی ڈالی انہوں نے بتایا کہ شام سندر شرما جو کہ برہمن تھے انہوں نے پنجاب سے اردو میڈیم سے ایس ایس سی کی تھی۔ 1973 میں آئیڈیل ایجوکیشن سوسائٹی کے ممبر بنے اور 2005 میں انہیں صدر بنایا گیا۔ ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ مہاراشٹر کی تاریخ میں اردو ادارہ کا 14 سال کے تویل عرصہ تک صدر ایک براہمن رہا ہو جو خود بھی اردو دان تھا۔ جس کو کاروبار کے لیے صدر جمہوریہ سے میڈل ملا۔
اس موقع پر ڈاکٹر قاضی نے آئیڈیگ پری پرائمری سیکشن شام سندر شرما کے نام سے منسوب کرنے کا اعلان بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسکول کی توسیع کے لیے بھی کوششیں کریں گے۔ اس موقع پر کارپوریٹر نجیب ملا نے مرحوم ٹرسٹیان کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے اور موجودہ ٹرسٹیان کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے اظہار خیال کے دوران سینئر کالج کے لیے حکومت یا میونسپل کارپوریشن سے جگہ فراہم کیے جانے کے لیے ڈاکٹر قاضی کے مطالبہ کی تائید کرتے ہوے کہا کہ وہ اس کے لیے حتیٰ الامکان کوشش کریں گے اور جلد ہی آئیڈیل سینئر کالج شروع کرنے کے لیے تعاون کریں گے۔ شکرانہ کی تحریک آئیڈیل ایجوکیشن سوسائٹی کے سیکریٹری جنرل محمد اسمعیل نیریکر نے پیش کی۔ حب الوطنی پر ایکٹ اور راشٹریہ گیت کے بعد تقریب اختتام پذیر ہوئی۔

HAJJ ASIAN

WARAQU-E-TAZA ONLINE

I am Editor of Urdu Daily Waraqu-E-Taza Nanded Maharashtra Having Experience of more than 20 years in journalism and news reporting. You can contact me via e-mail waraquetazadaily@yahoo.co.in or use facebook button to follow me